بیٹی کو اسکول میں داخلے کی بات پر شوہر نے بیوی کو تین طلاق دے کر گھر سے نکالا

Jul 12, 2017 01:26 PM IST | Updated on: Jul 12, 2017 01:26 PM IST

بریلی۔ ملک میں تین طلاق خواتین کے لئے ایک لعنت بن گیا ہے۔ شاید ہی کوئی ایسا دن گزرتا ہو جب تین طلاق کی وجہ سے کسی عورت کا ہنستا کھیلتا خاندان نہ اجڑتا ہو۔ تازہ معاملہ بریلی کا ہے، یہاں ایک عورت کو اپنی 4 سال کی بیٹی کو اسکول میں داخلہ دلانے کا مطالبہ کرنا مہنگا پڑ گیا۔ بیٹی کے داخلے کی بات شوہر کو اتنی ناگوار لگی کہ اس نے بیوی کو تین طلاق بول کر گھر سے دھکے دے کر دونوں کو نکال دیا۔ اتنا ہی نہیں شوہر کی طرف سے گھر سے نکالے جانے کے بعد جب متاثرہ اپنے میکے میں رہنے لگی تو وہاں اس کے دیور نے اس کے ساتھ ریپ کرنے کی کوشش کی۔ ابھی متاثرہ انصاف کے لئے پولیس اہلکاروں کے دروازے کھٹکھٹا رہی ہے۔

بریلی کے تھانہ پریم نگر کے سورک محلہ رہائشی ہما خان کا نکاح بریلی کے ہی محلہ اشرف خاں چھاؤنی رہائشی مہتاب کے ساتھ سال 2004 میں ہوا تھا جس کے بعد ان کو ایک بیٹی ہوئی۔ شوہر دہلی میں ایک پرائیویٹ کمپنی میں سپروائزر ہے۔ الزام ہے بیٹی پیدا ہونے کے بعد شوہر نے گھر پر دھیان دینا بند کر دیا۔ اپنی بیوی کے ساتھ شراب پی کر آئے دن جھگڑا اور مارپیٹ کرنے لگا۔ بیٹی جب ساڑھے چار سال کی ہوئی تو ہما کو اس کے مستقبل کی فکر ستانے لگی۔ ہما نے اپنے شوہر مہتاب سے اس کی تعلیم کے لئے اسکول میں داخلے کی بات کہی۔ بچی کی پرورش کرنے میں ناکام شوہر اسکول میں داخلے کی بات سے چراغ پا ہو گیا اور ہما ​​کو تین طلاق دے کر معصوم بیٹی کے ساتھ اسے گھر سے نکال دیا۔

بیٹی کو اسکول میں داخلے کی بات پر شوہر نے بیوی کو تین طلاق دے کر گھر سے نکالا

تین طلاق متاثرہ ہما

الزام ہے کہ جب عورت اپنے گھر پہنچی تو منگل کی رات اس کا شوہر اور اس کا دیور تاج میاں زبردستی گھر میں گھس گئے اور مارپیٹ کی۔ وہیں مخالفت کرنے پر متاثرہ کو بری نیت سے اس کے تاج میاں نے دبوچ لیا اور ریپ کی کوشش کی۔ متاثرہ نے جیسے تیسے اپنی عزت بچائی۔ جب وہ اس واقعہ کی تحریر دینے تھانے میں گئی تو ملزمان نے جان سے مارنے کی دھمکی دیتے ہوئے تھانے کے باہر ہی متاثرہ کو بھگا دیا۔

ابھی متاثرہ نے سماجی کارکن ندا خان کی مدد لی ہے۔ ندا نے سی ایم یوگی تک طلاق شدہ خواتین کے مسائل کو پہنچانے کے لئے ملنے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ بتا دیں ندا خان بریلی کے عالمی شہرت یافتہ اعلیٰ حضرت خاندان کی بہو رہی ہیں۔ ندا کو بھی تین طلاق دے کر نکال دیا گیا تھا۔ اس کے بعد سے وہ انصاف کے لئے ایک تنظیم بنا کر متاثرین کی مدد کر رہی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز