اب اے ٹی ایم سے مہینے میں پانچویں بار پیسے نکالے تو دینے ہوں گے 150 روپے

Mar 02, 2017 08:26 AM IST | Updated on: Mar 02, 2017 08:26 AM IST

نئی دہلی۔ ایچ ڈی ایف سی بینک، آئی سی آئی سی آئی بینک میں کیش ٹرانزیکشن کا نیا ضابطہ 1 مارچ سے لاگو ہو رہا ہے۔ نئے نوٹیفکیشن کے تحت اب بینک سے ایک ماہ میں چار بار سے زیادہ بار روپیہ جمع کرنے یا نکالے جانے پر کم از کم 150 روپے فیس لگیں گے۔ نوٹ بندی کے بعد ٹرانزیکشن کو بلا معاوضہ کرنے کی حد کو ہٹا دیا گیا ہے۔

ایچ ڈی ایف سی بینک کے نئے نوٹیفکیشن کے مطابق، یہ فیس بچت کے ساتھ ساتھ تنخواہ کھاتوں پر بھی لگے گی اور یہ آج سے نافذ ہو گئی ہے۔ ایچ ڈی ایف سی بینک نے تیسری پارٹی کے لئے نقد لین دین کی حد 25000 روپے یومیہ طے کی ہے۔ اس کے علاوہ نقد رکھ رکھاو کی فیس واپس لی جائے گی۔

اب اے ٹی ایم سے مہینے میں پانچویں بار پیسے نکالے تو دینے ہوں گے 150 روپے

اس اقدام کو نقد لین دین کی حوصلہ شکنی کرنے اور ڈیجیٹل ادائیگی مہم کو رفتار دینے کے اقدامات کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ صفر جمع والے اکاؤنٹس کیلئے زیادہ سے زیادہ چار بار مفت نقد کی نکاسی کی حد جاری رہے گی اور نقد جمع پر کوئی فیس نہیں لگے گی۔

آئی سی آئی سی آئی بینک کے معاملے میں فیس وہی رہیں گے جو آٹھ نومبر کو نوٹ بندی کے اعلان سے پہلے تھی۔ کچھ دیگر معاملات میں ایسے فیس میں اضافہ کیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز