دلی میٹرو میں بزرگ مسلم نے مانگی سیٹ، لڑکوں نے مبینہ طور پر کہا چلے جاؤ پاکستان

Apr 25, 2017 01:14 PM IST | Updated on: Apr 25, 2017 01:16 PM IST

نئی دہلی۔ دلی میٹرو سے ایک چونکانے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ ملی معلومات کے مطابق نوجوانوں کے ایک گروپ نے پہلے تو سینئر سٹیزن مسلم شخص کو سیٹ پر بیٹھنے دینے سے انکار کر دیا اور پھر ان کے ساتھ بے حیائی بھی کی۔ یہ لوگ صرف اتنے پر ہی نہیں رکے انہوں نے پاکستان جاؤ کے نعرے بھی لگائے۔

خواتین کے حقوق کی کارکن کویتا کرشنن نے اپنی ایک فیس بک پوسٹ کے ذریعے یہ مسئلہ اٹھایا ہے۔ اس پوسٹ میں کویتا نے الزام لگایا ہے کہ ان لوگوں نے نہ صرف سینئر سٹیزن والی سیٹ دینے سے انکار کیا بلکہ اس شخص کے لباس پر بھی نامناسب تبصرہ کیا۔ کویتا کے مطابق، اے آئی سی سی ٹی یو کے نیشنل سکریٹری سنتوش رائے بھی اس دوران میٹرو میں موجود تھے اور انہوں نے مداخلت کر کے معاملے کو ٹھنڈا کیا۔

دلی میٹرو میں بزرگ مسلم نے مانگی سیٹ، لڑکوں نے مبینہ طور پر کہا چلے جاؤ پاکستان

پی ٹی آئی: فائل فوٹو

سنتوش نے بتایا کہ جب انہوں نے اس نوجوان سے بزرگ سے معافی مانگنے کو کہا تو اس نے انہیں بھی پاکستان جانے کا مشورہ دے ڈالا ۔ اس معاملہ میں پنڈارا روڈ تھانے میں ایک شکایت بھی درج کرائی گئی ہے۔ حالانکہ بزرگ نے معاملہ نہ آگے بڑھانے کی بات کہہ کر شکایت واپس لے لی ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز