پاکستان میں کلبھوشن جادھو کے حالات کے بارے میں حکومت کو کوئی اطلاع نہیں : وزارت خارجہ

Apr 13, 2017 07:15 PM IST | Updated on: Apr 13, 2017 07:15 PM IST

نئی دہلی: پاکستان کی طرف سے موت کی سزا کا فرمان سنائے جانے کے بعد سرخیوں میں آئے سابق بحریہ افسر کلبھوشن جادھو کے حالات کے بارے حکومت کو اب تک کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان گوپال باگلے نے یہاں نامہ نگاروں سے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ حکومت ہند کو اطلاع نہیں ہے کہ مسٹر جادھو پاکستان میں کس حالت میں ہیں اور کس شہر میں ہیں کیونکہ پاکستان نے ہمیں کچھ نہیں بتایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر جادھو کو وطن لانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے۔

مسٹر باگلے نے مسٹر جادھو کو وطن واپس لانے کے لئے اقوام متحدہ انسانی حقوق کمیشن جیسے کسی تیسرے فریق کی مدد لینے کے امکان کی تردید کی اور واضح کیا کہ سابق بحریہ افسر کا یہ معاملہ قومی جذبہ میں تبدیل ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کا نام کلبھوشن ہے اور وہ اپنے خاندان کا وقار ہیں لیکن آج پورا ملک ان کے ساتھ ہے۔ قیادت نے اس معاملے کو اپنے ہاتھ میں لیا ہے۔

پاکستان میں کلبھوشن جادھو کے حالات کے بارے میں حکومت کو کوئی اطلاع نہیں : وزارت خارجہ

وزیر خارجہ سشما سوراج نے پارلیمنٹ حال میں اختتام پذیر ہوئے بجٹ اجلاس میں مسٹر جادھو کا مسئلہ نمایاں طورپر اٹھاتے ہوئے کہا کہ وہ پاکستان حکومت کو آگاہ کرتی ہیں کہ اگر وہ اس معاملے میں آگے بڑھتی ہے تو اسے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کے نتائج کے بارے میں غور کرنا چاہئے۔ انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ اگر مسٹر جادھو کو پھانسی دینے کی سزا پر عمل کیا جاتا ہے تو اسے جان بوجھ کر قتل کی کارروائی سمجھا جائے گا۔

مسٹر باگلے نے محترمہ سوراج کے اس بیان کا حوالہ دیا کہ کلبھوشن جادھو کے کوئی غلط کام کئے جانے کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ قونصلر نے مسٹر جادھو تک پہنچنے کی 13 بار کوشش کی لیکن انہیں منع کر دیا گیا جبکہ دو طرفہ تعلقات کے تحت قونصلر کو متعلقہ شخص تک پہنچنے کا حق ہے اور یہ بین الاقوامی قانون بھی ہے۔ اس سوال پر کہ پاکستان نے قونصلر کے مسٹر جادھو تک مشروط پہنچنے کی پیشکش کی ہے، مسٹر باگلے نے کہا کہ رسائی کے لئے قونصل خانہ کے سامنے کوئی شرط رکھنے کا مطلب ہی یہ ہے کہ وہ قونصلر کو پہنچنے نہیں دینا چاہتا ہے۔ دریں اثنا ذرائع نے کہا کہ حکومت مسٹر جادھو تک قونصلر کو پہنچنے دینے کی اجازت دینے کی پھر درخواست کرے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز