کلبھوشن کے تبادلہ سے متعلق پاکستان کے بیان کو ہندوستان نے بتایا جھوٹ کی کڑی میں ایک اور اضافہ

Sep 29, 2017 09:16 PM IST | Updated on: Sep 29, 2017 09:16 PM IST

نئی دہلی: ہندوستان نے آج پاکستان پر جھوٹ پھیلانے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد اور کابل کے درمیان ایسی کوئی بات چیت نہیں ہوئی جس میں ہند نژاد کلبھوشن جادھو کو افغانستان کے حوالے کرنے اور پشاور میں 2014 میں ایک اسکول پر ہولناک حملہ کرنے والے ایک دہشت گرد کو جو افغانستان میں داخل زنداں ہے، پاکستان کے حوالے کرنے کی باتیں ہوئیں۔ یہاں وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ’’یہ جھوٹ کی کڑی میں ایک اور اضافہ ہے۔‘‘

ان میڈیا رپورٹوں پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے جن میں پاکستانی وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف کے حوالے سے دعوی کیا گیا ہے کہ پاکستان اور اٖفغانستان کے درمیان ایسی بات چیت ہوئی ، مسٹر کمار نے کہا کہ افغان حکام نے بھی ایسی کسی بات چیت کی تردید کردی ہے۔ انہوں نے اس معاملے پر اظہار خیال کے درمیان یہ بھی کہا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں بھی پاکستان کی طرف سےدروغ گوئی کی کوشش بے نقاب ہوگئی۔

کلبھوشن کے تبادلہ سے متعلق پاکستان کے بیان کو ہندوستان نے بتایا جھوٹ کی کڑی میں ایک اور اضافہ

یہ پوچھے جان پر کہ کیا تبادلےکی ایسی کسی تجویز کو ہندوستان پسند کرے گا۔ وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ایسی کسی تجویز پر کوئی بات ہوئی ہی نہیں ہے اور ہم یہ بھی نہیں جانتے کہ کس نے کس سے کیابات کی۔ اس بات چیت کی تو پہلے ہی تردید ہوچکی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز