ایل او سی پر دراندازی کی کوشش ناکام، حزب المجاہدین کا اعلیٰ کمانڈر قیوم نجار ہلاک

فوج نے شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے اوڑی سیکٹر میں منگل کے روز دراندازی کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے حزب المجاہدین کے اعلیٰ کمانڈر عبدالقیوم نجار کو ہلاک کر دیا۔

Sep 26, 2017 09:55 PM IST | Updated on: Sep 26, 2017 09:56 PM IST

سری نگر۔ فوج نے شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے اوڑی سیکٹر میں منگل کے روز دراندازی کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے حزب المجاہدین کے اعلیٰ کمانڈر عبدالقیوم نجار کو ہلاک کر دیا۔ ریاستی پولیس کا کہنا ہے کہ قیوم نجار سال 2015 میں پاکستان کے زیر قبضہ کشمیر چلا گیا تھا اور اب وادی میں ایچ ایم کی کمان سنبھالنے کے لئے واپس وادی کشمیر آرہا تھا۔ تاہم اسے سرحد کے اس پار داخل ہونے کے فوراً بعد ہلاک کر دیا گیا۔

وزارت دفاع کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے یو این آئی کو بتایا کہ اوڑی سیکٹر میں ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجیوں نے منگل کی صبح جنرل زورآور علاقہ میں پاکستان زیر قبضہ کشمیر سے ایک مسلح جنگجو کو سرحد کے اس پار داخل ہوتے ہوئے دیکھا۔ انہوں نے بتایا کہ جب مذکورہ جنگجو کو ہتھیار ڈالنے کے لئے کہا گیا تو اس نے ایسا کرنے کے بجائے خودکار ہتھیار سے اندھا دھند دفائرنگ شروع کردی۔ راجیش کالیا نے بتایا کہ جنگجو کی فائرنگ کے بعد طرفین کے مابین گولہ باری کا تبادلہ ہوا جس میں مذکورہ جنگجو کو ہلاک کر دیا گیا۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ مہلوک جنگجو کی شناخت قیوم نجار کے بطور کی گئی ہے۔

ایل او سی پر دراندازی کی کوشش ناکام، حزب المجاہدین کا اعلیٰ کمانڈر قیوم نجار ہلاک

علامتی تصویر

انہوں نے بتایا ’قیوم نجار سال 2015 میں پاکستان کے زیر قبضہ کشمیر چلا گیا تھا اور اب وادی میں ایچ ایم کی کمان سنبھالنے کے لئے واپس آرہا تھا‘۔ ذرائع نے بتایا کہ ضلع بارہمولہ ممکاک سوپور کا رہنے والا نجار 1999 سے وادی میں سرگرم تھا۔ انہوں نے بتایا کہ نجار کو متحدہ جہاد کونسل کے سربراہ سید صلاح الدین نے وادی میں ایچ ایم کے احیائے نو کے لئے واپس وادی روانہ کیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز