محکمہ انکم ٹیکس کا شکنجہ، بینکوں سے نوٹ بند ی سے پہلے نقدی جمع کی تفصیلات طلب

Jan 08, 2017 03:52 PM IST | Updated on: Jan 08, 2017 03:52 PM IST

نئی دہلی : محکمہ انکم ٹیکس نوٹ بندی سے پہلے بینکوں میں جمع رقم کو کھنگالنے کی تیاری میں ہے۔ محکمہ نے بینکوں سے ایک اپریل سے 9 نومبر 2016 کے درمیان سیونگ اکاؤنٹس میں نقد جمع کے بارے میں رپورٹ طلب کی ہے۔ علاوہ ازیں بینکوں سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ وہ ان اکاؤنٹ ہولڈروں سے پین کارڈ یا فارم 60 (جن کے پاس پین نہیں ہے) 28 فروری تک جمع کرنے کیلئے کہیں جنہوں نے اکاؤنٹ کھولتے وقت یہ جمع نہیں کرایا تھا۔

ایک نوٹیفکیشن کے مطابق بینک کوآپریٹیو بینکوں اور ڈاک خانوں کو یکم اپریل سے نو نومبر 2016 کے درمیان تمام نقدی جمع کے بارے میں معلومات دینی ہوگی۔ نو نومبر سے 500 اور ایک ہزار روپے کے نوٹوں پر پابندی لگائی گئی تھی۔ ساتھ ہی بینک حکام کو اکاؤنٹ ہولڈروں سے پین یا فارم 60 لینے اور انکم ٹیکس ایکٹ کے تحت لین دین کے تمام ریکارڈ کو رکھنے کیلئے کہا گیا ۔

محکمہ انکم ٹیکس کا شکنجہ، بینکوں سے نوٹ بند ی سے پہلے نقدی جمع کی تفصیلات طلب

محکمہ کے مطابق جن لوگوں نے اکاؤنٹ کھولتے وقت پین کارڈ یا فارم 60 کا ذکر نہیں کیا ہے، انہیں 28 فروری تک اس کو جمع کرانا ہوگا۔قبل ازیں نو نومبر سے نافذ نوٹ بند ی کے پیش نظر محکمہ انکم ٹیکس نے بینکوں اور ڈاک خانوں سے 10 نومبر سے 30 دسمبر 2016 کے درمیان سیونگ اکاؤنٹس میں 2.5 لاکھ روپے سے زیادہ کی جمع رقم اور موجودہ اکاؤنٹ میں 12.50 لاکھ روپے سے زیادہ کی رقم کے بارے میں معلومات دینے کیلئے کہا تھا۔ ساتھ ہی ایک دن میں پچاس ہزار روپے سے زیادہ کی نقدی جمع رقم کے بارے میں بھی معلومات مانگی گئی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز