جے رام ٹھاکر ہوں گے ہماچل پردیش کے تیرہویں وزیراعلی ، پانچ مرتبہ رہ چکے ہیں ممبر اسمبلی

ہماچل پردیش میں ایک ہفتہ کی کھینچ تان کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے آخر کار آج جے رام ٹھاکر کو اپنی قانون ساز پارٹی کا لیڈر منتخب کرلیا۔

Dec 24, 2017 03:46 PM IST | Updated on: Dec 24, 2017 03:46 PM IST

شملہ: ہماچل پردیش میں ایک ہفتہ کی کھینچ تان کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے آخر کار آج جے رام ٹھاکر کو اپنی قانون ساز پارٹی کا لیڈر منتخب کرلیا۔ پانچ مرتبہ رکن اسمبلی رہ چکے مسٹر ٹھاکر ویربھدر سنگھ کی جگہ ریاست کے وزیراعلی بنیں گے۔ پارٹی نے 68رکنی اسمبلی انتخابات میں کانگریس کو شکست دیتے ہوئے 44 سیٹوں پر کا میابی حاصل کی تھی اور کانگریس صرف 21سیٹوں پر ہی سمٹ گئی تھی حالانکہ بی جے پی کو ایک جھٹکا اس وقت ضرور لگا جب اس کے وزیراعلی کے عہدہ کے امیدوار پریم کمار دھومل کو سوجان پور سے الیکشن میں شکست ملی۔

پارٹی کی ریاستی یونٹ نے آج اپنے اراکین اسمبلی کی میٹنگ بلائی تھی جہاں مرکزی مشاہدین سیتارمن، نریندر تومر، ریاست میں پارٹی کے معاملات کے انچارج منگل پانڈے وغیرہ موجود تھے۔ مسٹر دھومل کو شکست ملنے کے باوجود ان کے حامی پیچھے ہٹنے کو تیار نہیں تھے۔ اس درمیان مسٹر ٹھاکر کے علاوہ صحت کے مرکزی وزیر جے پی نڈا کا نام بھی اس عہدہ کے دعویداروں کی فہرست میں آیا تھا۔ دو دن پہلے مسٹر دھومل اور مسٹر ٹھاکر کے حامی آپس میں لڑپڑے تھے۔ بعد میں مسٹر دھومل اور مسٹر ٹھاکر نے اپنے حامیوں سے پرسکون رہنے کی اپیل کی اور پارٹی اعلی کمان کا فیصلہ قبول کرنے کی گزارش کی ۔

جے رام ٹھاکر ہوں گے ہماچل پردیش کے تیرہویں وزیراعلی ، پانچ مرتبہ رہ چکے ہیں ممبر اسمبلی

مسٹر ٹھاکر چھٹے لیڈر ہیں جو ہماچل پردیش کے وزیراعلی بنیں گے۔ ان سے پہلے ڈاکٹر وائی ایس پرمار (چارمرتبہ)، رام لال ٹھاکر ، شانتا کمار (تین مرتبہ)، ویربھدر سنگھ (پانچ مرتبہ) اور مسٹر دھومل (دو مرتبہ) وزیراعلی رہ چکے ہیں۔ بی جے پی سے مسٹر ٹھاکر سے پہلے مسٹر دھومل وزیراعلی رہ چکے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز