ارون جیٹلی نے کیجریوال پر 10 کروڑ روپئے کا ہتک عزت کا ایک اور مقدمہ کیا

May 22, 2017 04:10 PM IST | Updated on: May 22, 2017 04:10 PM IST

نئی دہلی۔  دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کی مشکلیں کم ہوتی نظر نہیں آ رہی ہیں۔ پارٹی میں احتجاج کی آوازوں کے درمیان مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے مسٹر کیجری وال پر 10 کروڑ روپئے کا ہتک عزت کا ایک اور مقدمہ کردیا ہے۔ دہلی ڈسٹرکٹ اینڈ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) میں مبینہ طور پر مالی بے ضابطگی کا الزام لگانے پر مسٹر جیٹلی نے پہلے بھی مسٹر کیجری وال پر 10 کروڑ روپئے کا مجرمانہ ہتک عزت کا دعوی کیا تھا۔ مسٹر جیٹلی نے نیا مقدمہ ڈی ڈی سی اے مقدمہ کی گزشتہ سماعت کے دوران مسٹر کیجری وال کے وکیل رام جیٹھ ملانی کے ذریعہ ان کے لئے ’بدمعاش‘ لفظ کا استعمال کئے جانے پر دہلی ہائی کورٹ میں کیا ہے۔

گزشتہ ہفتہ جمعرات کو دہلی ہائی کورٹ میں ہی مقدمہ کی سماعت کے دوران مسٹر کیجری وال کی جانب سے پیروی کر رہے مسٹر جیٹھ ملانی نے مرکزی وزیر کو ’کُرک‘ کہا۔ مسٹر جیٹلی اس سے ناراض ہوگئے اور مسٹر جیٹھ ملانی کے ساتھ تو تو میں میں بھی ہوگئی۔ اس کی وجہ سے سماعت ملتوی کرنی پڑی۔ مسٹر جیٹھ ملانی کا کہنا تھا کہ بدمعاش لفظ کا استعمال مسٹر کیجری وال کے کہنے پر کیا گیا تھا۔ نئے مقدمہ میں مسٹر جیٹلی کے وکیل مانک ڈوگرا نے بتایا کہ ہم نے مسٹر کیجری وال پر 10 کروڑ روپئے کا ہرجانہ مانگتے ہوئے ہتک عزت کا نیا مقدمہ دائر کیا ہے۔ مسٹر ڈوگرا نے کہا کہ مسٹر جیٹھ ملانی نے عدالت میں یہ کہا تھا کہ انہوں نے ’بدمعاش‘ لفظ کا استعمال اپنے موکل کے کہنے پر کیا تھا۔

ارون جیٹلی نے کیجریوال پر 10 کروڑ روپئے کا ہتک عزت کا ایک اور مقدمہ کیا

ارون جیٹلی: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز