بیٹیاں بھی سماج میں اہم حصہ داری نبھا سکتی ہیں: پروفیسر طلعت احمد

Feb 14, 2017 07:59 PM IST | Updated on: Feb 14, 2017 08:02 PM IST

نئی دہلی۔ بیٹیاں بھی سماج میں حصہ داری نبھا سکتی ہیں ، بس انھیں موقع دینے اور ان کی صلاحیتوں کو نکھارنے کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار جامعہ ملیہ اسلامیہ کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد نے جامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے ’بیٹی بچاو بیٹی پڑھاو‘مہم کے تحت سائکل ریلی کو جامعہ کیمپس سے صبح نو بجے ہریانہ کے دھوج کے لئے روانہ کرنے کے بعد میڈیا سے بات چیت کے دوران کیا۔ پروفیسر طلعت احمد نے کہا کہ خواتین آگے بڑھیں گی تو پورا سماج اور معاشرہ پروان چڑھے گا ، یہ سائیکل ریلی اسی کا ایک حصہ ہے جس کا مقصد خواتین کو بھی آگے بڑھانا اور ان کی ہمت افزائی کرنا ہے تاکہ خواتین بھی مردوں کے شانہ بشانہ کام کر سکیں ۔ انھوں نے کہا کہ اس ریلی کے ذریعہ حکومت ہند کی جانب سے چلائی جانے والی کیش لیس مہم کو بھی فروغ دینا ہے ۔

جامعہ ملیہ اسلامیہ ڈائریکٹر آف اسپورٹس پروفیسر اقتدار احمد نے بتایا کہ اس ریلی میں تقریبا بیس طلباء نے حصہ لیا ہے جس میں دس لڑکے اور دس لڑکیاں ہیں ۔ انھوں نے بتایاکہ یہ ریلی جامعہ ملیہ اسلامیہ سے سائیکل کے ذریعہ چل کر ہریانہ کے دھوج پہنچے گی جہاں فرید آباد کے پولس کمشنر حنیف قریشی طلباء کا استقبال کریں گے ۔ خیال رہے کہ یہ سائیکل ریلی کل بارہ بجے تک واپس لوٹ آئے گی جسے جامعہ ملیہ کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد اور جامعہ ملیہ اسلامیہ کے دیگر ذمہ داران ریسیو کریں گے ۔

بیٹیاں بھی سماج میں اہم حصہ داری نبھا سکتی ہیں: پروفیسر طلعت احمد

آج کے اس ریلی روانگی پروگرام میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اساتذہ اور طلباء سمیت بڑی تعداد میں علاقائی لوگ بھی شامل تھے ۔ جسے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد ، ڈائریکٹر آف اسپورٹس پروفیسر اقتدار احمد، این ایس ایس کے پروگرام کو آرڈی نیٹرپروفیسر این یو خان ، ڈین اسٹوڈنٹ ویلفیر ڈاکٹر تسنیم مینائی نے ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز