جامعہ ملیہ اسلامیہ کا اقلیتی کردار معاملہ: جامعہ ٹیچر ایسوسی ایشن مرکز کے خلاف لڑے گا مقدمہ

Aug 09, 2017 02:50 PM IST | Updated on: Aug 09, 2017 02:50 PM IST

نئی دہلی۔ مرکزی حکومت جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اقلیتی کردار کو ختم کرنے کے فراق میں ہے جس پر جامعہ ٹیچرایسوسی ایشن کافی محتاط ہے اور وہ اس کے خلاف عدالت میں لڑائی بھی لڑنے کو تیار ہے۔ حالانکہ اقلیتی کردار کا معاملہ پہلے سے ہی عدالت میں بھی زیرغور ہے ۔ جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اقلیتی کرارکو ختم کرنے کے لئے مرکز میں برسر اقتدار بی جے پی حکومت عدالت میں ایک حلف نامہ داخل کرنے کی تیاری میں ہے ۔ اس کو لیکر اب سیاست بھی تیز ہو چکی ہے ۔ جہاں جامعہ ایڈمنسٹریشن اس معاملہ میں کچھ بھی بولنے سے بچ رہا ہے تو وہیں جامعہ کے ٹیچر ایسو سی ایشن اس پرمحتاط رویہ اختیار کئے ہوئے ہے ۔

ایسو سی ایشن نے اس معاملہ پر اپنے ممبران کے ساتھ ایک ہنگامی میٹنگ کر کے فیصلہ کیا ہے کہ ہم حکومت کے خلاف عدالت میں لڑائی لڑنے کو تیار ہیں ۔ میٹنگ میں اقلیتی کردار کے تعلق سے جو باریکیاں ہیں ان پر بھی وکیل کے ساتھ غور و فکر کیا گیا ۔ ایسو سی ایشن کے سکریٹری ایس ایم محمود نے ای ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا یہ معاملہ کوئی نیا نہیں ہے اسے خواہ مخواہ طول دیا جا رہا ہے۔ ہم اس کی لڑائی بھی لڑ رہے ہیں اور ہم ہی اس میں پارٹی ہیں۔

جامعہ ملیہ اسلامیہ کا اقلیتی کردار معاملہ: جامعہ ٹیچر ایسوسی ایشن مرکز کے خلاف لڑے گا مقدمہ

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز