کشمیر میں ایل او سی پر جنگ بندی کی 3 بڑی کوششیں ناکام، 7 جنگجو، ایک فوجی اہلکار ہلاک

Jun 08, 2017 03:49 PM IST | Updated on: Jun 08, 2017 03:49 PM IST

سری نگر۔ فوج نے شمالی کشمیر میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پاکستان زیر قبضہ کشمیر سے دراندازی کی تین بڑی کوششوں کو ناکام بناتے ہوئے 7 جنگجوؤں کو ہلاک کیا ہے۔ تاہم دراندازوں کے ساتھ گولہ باری کے تبادلے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک جبکہ دو دیگر زخمی ہوگئے ہیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دراندازوں کے خلاف تین مختلف مقامات پر آپریشن جاری ہے۔ انہوں نے بتایا ’ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجیوں نے جمعرات کی علی الصبح نوگام سیکٹر میں پاکستان زیر قبضہ کشمیر سے جنگجوؤں کے ایک گروپ کو اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے بھارتی علاقہ میں داخل ہوتے ہوئے دیکھا‘۔ تاہم جب دراندازی کے مرتکب جنگجوؤں کو للکارا گیا اور خودسپردگی اختیار کرنے کے لئے کہا گیا تو انہوں نے ایسا کرنے کے بجائے فوجیوں پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی۔

سرکاری ذرائع نے بتایا ’فوجیوں نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین باضابطہ طور پر جھڑپ کا آغاز ہوا، جس میں 3 جنگجوؤں کو ہلاک کیا گیا‘۔ انہوں نے بتایا کہ دراندازوں کی فائرنگ کی وجہ سے ایک فوجی اہلکار جاں بحق ہوا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ آخری اطلاعات ملنے تک آپریشن جاری تھا۔ ایسی ہی ایک کوشش کے تحت قریب چھ جنگجوؤں نے جمعرات کی صبح اوڑی سیکٹر میں سرحد کے اس پار داخل ہونے کی کوشش کی ہے۔ تاہم جب ایل او سی پر تعینات فوجیوں نے انہیں سرحد کے اس پار داخل ہونے کی کوشش کرتے ہوئے دیکھا اور انہیں خودسپردگی اختیار کرنے کی پیشکش کی تو انہوں نے ایسا کرنے کے بجائے اپنی بندوقوں کے دھانے کھول دیے۔

کشمیر میں ایل او سی پر جنگ بندی کی 3 بڑی کوششیں ناکام، 7 جنگجو، ایک فوجی اہلکار ہلاک

ہندوستانی فوج: فائل فوٹو، پی ٹی آئی

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جنگجوؤں کی فائرنگ سے فوج کے دو اہلکار زخمی ہوگئے ہیں۔ انہوں نے بتایا ’علاقہ میں بڑے پیمانے پر تلاشی آپریشن شروع کیا گیا ہے، جبکہ زخمی اہلکاروں کو ائرلفٹ کرکے سری نگر میں بادامی باغ فوجی چھاونی میں واقع فوجی اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے‘۔ دراندازی کی ان کوششوں کو ناکام بنانے سے قبل فوج نے بدھ کے روز ضلع کپواڑہ میں لائن آف کنٹرول کے مژھل سیکٹر میں دراندازی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے 4 بھاری مسلح جنگجوؤں کو ہلاک کیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ مژھل سیکٹر میں ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجیوں نے جنگجوؤں کے ایک گروپ کو 6 مئی کی رات دیر گئے اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے پاکستان زیر قبضہ کشمیر سے سرحد کے اس پار داخل ہوتے ہوئے دیکھا۔ انہوں نے بتایا کہ جب جنگجوؤں کو للکارا گیا اور خودسپردگی اختیار کرنے کے لئے کہا گیا تو انہوں نے ایسا کرنے کے بجائے اپنی بندوقوں کے دھانے کھول دیے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز