وسطی کشمیر کے بڈگام میں 10 گھنٹے کی طویل جھڑپ ایک جنگجو کی ہلاکت پر ختم

Mar 28, 2017 02:32 PM IST | Updated on: Mar 28, 2017 06:38 PM IST

سری نگر۔  وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے چاڈورہ میں دس گھنٹوں تک جاری رہنے والی مسلح جھڑپ ایک جنگجو کی ہلاکت پر ختم ہوگئی ہے۔ اس طویل جھڑپ میں فوج کا ایک اہلکار زخمی ہوگیا ہے۔ وزارت دفاع کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے یو این آئی کو بتایا کہ چاڈورہ کے دربگ میں جنگجوؤں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر فوج اور جموں وکشمیر پولیس کے اسپیشل آپریشن گروپ (ایس او جی) نے منگل کی علی الصبح مذکورہ گاؤں میں تلاشی آپریشن شروع کیا۔ تاہم جب سیکورٹی فورسز مذکورہ گاؤں میں ایک مخصوص جگہ کی جانب پیش قدمی کررہے تھے تو وہاں موجود جنگجو نے ان پر خودکار ہتھیاروں سے اندھا دھند دفائرنگ کی۔

انہوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے جوابی فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے مابین باضابطہ طور پر جھڑپ کا آغاز ہوا۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ جھڑپ ایک جنگجو کی ہلاکت پر ختم ہوگئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مارے گئے جنگجو کے قبضے سے ایک اے کے 47 رائفل برآمد ہوئی ہے۔ ترجمان نے بتایا کہ جھڑپ کے دوران ایک فوجی اہلکار زخمی ہوا جس کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا۔ ذرائع نے بتایا کہ جس رہائشی مکان میں جنگجو محصور تھا، اسے دھماکہ خیز مواد سے زمین بوس کردیا گیا۔

وسطی کشمیر کے بڈگام میں 10 گھنٹے کی طویل جھڑپ ایک جنگجو کی ہلاکت پر ختم

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز