امریکہ کا یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی تسلیم کرنا انتہائی مذموم و افسوسناک : مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی

Dec 08, 2017 08:24 PM IST | Updated on: Dec 08, 2017 08:25 PM IST

نئی دہلی: مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے امیر مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی طرف سے یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی تسلیم کئے جانے اور امریکی سفارت خانہ کی تل ابیب سے بیت المقدس منتقلی کو عالمی قوانین اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کی کھلی خلاف ورزی، عالم اسلام کی دل آزاری اور نہایت مذموم و افسوسناک فیصلہ قرار دیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ اس غیر عادلانہ فیصلے پر نظر ثانی کیا جائے۔

مولانا سلفی نے کہا کہ اسلام میں سرزمین بیت المقدس کو عظیم مقام حاصل ہے اور ساری دنیا کے مسلمانوں کے دلوں میں اس کی وقعت و حیثیت مسلم ہے۔ یہ سر زمین معراج اور مسلمانوں کا قبلہ اول ہے اور اس سے ان کا ایمانی و جذباتی لگاؤ ہے ۔ یہ فلسطینی عوام کا حق ہے اور اسرائیل کا اس پر غاصبانہ قبضہ ہے ۔ امریکی صدر کے بیان نے مسلمانان عالم اور عالمی برادری کے اندر شدید اضطراب و بے چینی پیدا کردیا ہے۔

امریکہ کا یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی تسلیم کرنا انتہائی مذموم و افسوسناک :  مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی

مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی ۔ فائل فوٹو

انہوں نے مزید کہا کہ ساری دنیا جانتی ہے کہ اسرائیل عالم اسلام کے قلب میں ناجائز ریاست ہے ۔ امریکہ نے اپنے اس فیصلہ کے ذریعہ مشرق وسطیٰ خصوصا فلسطین میں جاری امن مساعی کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں عالمی برادری سے اپیل کی ہے کہ اسرائیل کے ہاتھوں مظلوم و مقہور فلسطینیوں کے حقوق کی بازیابی کے لیے آگے آئیں۔ یہ ان کا انسانی واخلاقی فریضہ ہے ۔ نیز انہوں نے مطالبہ کیا ہے امریکہ اپنے سپر پاور ہونے کی لاج رکھتے ہوئے اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز