جیٹھ ملانی: اروند کیجریوال نے مجھ سے کہا تھا، ارون جیٹلی کو برا بھلا کہنے کو

Jul 29, 2017 09:02 AM IST | Updated on: Jul 29, 2017 09:02 AM IST

نئی دہلی۔ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر ان کے وکیل رام جیٹھ ملانی نے حملہ بولا ہے۔ رام جیٹھ ملانی نے کہا ہے کہ خود کیجریوال نے ہی انہیں وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے خلاف برا بھلا لفظ استعمال کرنے کو کہا تھا۔

انہوں نے دعوی کیا ہے کہ اروند کیجریوال نے جیٹلی کے خلاف اور بھی زیادہ برا بھلا استعمال کرنے کو کہا تھا۔ انہوں نے کیجریوال کو خط لکھ کر اپنی فیس کا مطالبہ کیا ہے۔ ساتھ ہی 20 جولائی کو جیٹھ ملانی نے کیجریوال کو خط لکھ کر جیٹلی کی طرف سے دائر ہتک عزت کے کیس کو لڑنے سے خود کو الگ کر لیا تھا۔ اگرچہ اس سے پہلے انہوں نے خود ہی اعلان کیا تھا کہ وہ کیجریوال کا کیس مفت میں لڑیں گے۔

جیٹھ ملانی: اروند کیجریوال نے مجھ سے کہا تھا، ارون جیٹلی کو برا بھلا کہنے کو

رام جیٹھ ملانی: فائل فوٹو

اروند کیجریوال نے کورٹ میں کہا کہ ان کے وکیل نے اپنی طرف سے جیٹلی کے خلاف برا بھلا کا استعمال کیا ہے جس سے جیٹھ ملانی ناراض ہو گئے۔ انہوں نے 20 جولائی کو نہ صرف اروند کیجریوال کو خط لکھا بلکہ اس کی ایک کاپی وزیر خزانہ ارون جیٹلی کو بھی بھیج دی۔ اپنے خط میں جیٹھ ملانی نے کیجریوال سے کہا ہے کہ جب ارون جیٹلی نے ہتک عزت کا پہلا کیس درج کیا تھا تو آپ نے میری مدد لی۔

کیجریوال نے جیٹلی پر ڈی ڈی سی اے گھوٹالے میں شامل ہونے کا الزام لگایا تھا۔ جس کے بعد جیٹلی نے ان کے خلاف ہتک عزت کا کیس درج کرتے ہوئے 10 کروڑ روپے کی مانگ کی تھی ۔20 جولائی کو کیجریوال کو لکھے خط میں جیٹھ ملانی نے کہا کہ آپ نے مجھ سے سینکڑوں بار کہا کہ اس (برا بھلا) کو سبق سكھائیے۔

کیجریوال نے بعد میں دہلی ہائی کورٹ میں حلف نامہ دے کر کہا ہے کہ انہوں نے جیٹھ ملانی کو ایسے کسی برا بھلا کے استعمال کا مشورہ نہیں دیا تھا۔ انہوں نے یہ بات جیٹھ ملانی سے بھی خط کے ذریعے کہی۔ کیجریوال نے اپنے حلف نامے میں کہا کہ یہ بات ہضم ہونے کے قابل نہیں ہے اور نہ ہی کوئی سوچ سکتا ہے کہ ایک سینئر وکیل کو اس طرح کے برا بھلا کہنے کے لئے کوئی کہے گا۔ دہلی کے وزیر اعلی نے اپنے حلف نامے میں یہ بھی کہا کہ نہ تو انہوں نے اور نہ ہی ان کے وکیل (انوپم شریواستو) نے سینئر وکیل (جیٹھ ملانی) کو برا بھلا استعمال کرنے کی ہدایت دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز