ملک میں موجودہ فرقہ وارانہ ماحول کی مخالفت میں جمعیت علمائے ہند نے منسوخ کیا عید ملن کا انعقاد

Jun 25, 2017 09:24 PM IST | Updated on: Jun 26, 2017 05:45 PM IST

نئی دہلی : ملک کے موجودہ حالات میں جس طرح اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں اور دلتوں میں احساس کمتری پیدا کرنے اور انھیں دوسرے درجے کے شہری بنانے کی کوشش کی جارہی ہے اور ساتھ ہی بھیڑ بناکران پر حملے کیے جارہے ہیں، اس کے مدنظر جمعیۃ علماء ہند نے امن پسند و انصاف پسند عوام کے جذبات کا لحاظ کرتے ہوئے آئندہ 30 جون کو ہونے والی اپنی عید ملن تقریب منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے کہا کہ ہم نے بہت ہی رنج و غم کے احساس کے ساتھ یہ قدم اٹھایا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ملک میں اکثریتی طبقے میں احساس برتری اور اقلیتوں میں احساس کمتری پیدا کرنے کے مقصد اور ذہنیت کے ساتھ حملے کیے جارہے ہیں اور حکومت، کمزور اور مظلوم عوام کو تحفظ فراہم کرنے میں مسلسل تساہلی کا مظاہرہ کررہی ہے ۔

ملک میں موجودہ فرقہ وارانہ ماحول کی مخالفت میں جمعیت علمائے ہند نے منسوخ کیا عید ملن کا انعقاد

مولانا محمود مدنی: فائل فوٹو

مولانا مدنی نے کہا کہ ہم پوری امید کرتے ہیں کہ حکومت ،ہمارے احساسات کو سمجھتے ہوئے کمزور اور مظلوم طبقات کے مسائل کا حل نکالے گی اور فوری طور پر امن و امان اور اعتماد کی فضا بحال کرنے کی کوشش کرے گی تاکہ عوام پوری مسرت ، اطمینان وسکون سے عید ، ہولی اور دیوالی جیسے خوبصورت تہواروں کو باہمی میل جول سے مناسکیں اور ایک دوسرے کی خوشی اور دکھ درد میں شریک ہو سکیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز