این ڈی ٹی وی پر سی بی آئی چھاپہ کو صحافیوں نے بتایا جمہوریت کے لئے خطرہ

Jun 09, 2017 11:06 PM IST | Updated on: Jun 09, 2017 11:07 PM IST

نئی دہلی : ملک معروف صحافیوں نے این ڈی ٹی وی پر چھاپہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے اسے پریس کی آزادی پر حملہ اور جمہوریت کے لئے خطرے کی گھنٹی قرا ردیا اور کہا کہ حکومت کی یہ کارروائی ایمرجنسی کے دنوں کی یاد دلاتی ہے اس لئے میڈیا برادری کو اظہار رائے کی آزادی کی حفاظت کے لئے متحد ہونے کی ضرورت ہے۔

بزرگ صحافی ایس نہال سنگھ، کلدیپ نیر ، معروف وکیل اور راجیہ سبھا کے سابق رکن فالی ایس نریمن، راجیہ سبھا کے سابق نامز رکن اور ہندوستان ٹائمس کے سابق صحافی ایچ کے دوا، سابق مرکزی وزیر اور معروف صحافی ارون شوری، انڈین ایکسپریس کے سابق ایڈیٹر شیکھر گپتا ، ایڈیٹرس گلڈ آف انڈیا کے سربراہ راج چینگپا، معروف صحافی ٹی این نائنن ، یونیوارتا کی سابق سینئر صحافی شوبھنا جین اور جن ستاکے سابق مدیر او م تھانوی نے سی بی آئی چھاپے کی مخالفت میں آج یہاں پریس کلب میں منعقد اجلاس میں صحافیوں کو خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی۔

این ڈی ٹی وی پر سی بی آئی  چھاپہ کو صحافیوں نے بتایا جمہوریت کے لئے خطرہ

ان صحافیوں نے کہا کہ این ڈی ٹی وی پر چھاپے کی کارروائی سرکار کے ذریعہ میڈیا کو دھمکانے اور اسے کنٹرول کرنے کی کوشش ہے۔ انہوں نے کہا کہ اندرا گاندھی کی طرح بڑی اکثریت کے ساتھ اقتدار میں آئی موجودہ حکومت بھی میڈیا کو ڈرانے دھمکانے اور کنٹرول کرنے کی کوشش کررہی ہے لیکن ہم صحافی اس سے ڈرنے والے نہیں ہے اور ایمرجنسی کی طرح اس حکومت کے خلاف بھی پوری طاقت سے لڑیں گے۔

پریس کلب آف انڈیا، فیڈریشن آف پریس کلبس آف انڈیا، انڈین وومن پریس کور، ایڈیٹرس گلڈ آف انڈیا، پریس ایسوسی ایشن، دہلی جرنلسٹس ایسوسی ایشن ، بھارتیہ پترکار سنگھ اور فارن کارسپانڈنٹس کلب کی طرف سے منعقد اس احتجاجی میٹنگ میں بڑی تعداد میں انگلش، ہندی، اردو اور دیگر زبانوں کے علاوہ الیکٹرانک چینلوں کے صحافی بھی موجود تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز