چھیڑ چھاڑ سے پریشان ہوکر چلتی ٹرین سے کودی ماں اور بیٹی ، تماشائی کی طرح دیکھتی رہی پولیس

اترپردیش میں کانپور کے چنداری اسٹیشن کے نزدیک ٹرین میں چھیڑ چھاڑ سے پریشان ہوکر ایک خاتون اپنی بیٹی کے ساتھ چلتی ٹرین سے کود گئی ۔

Nov 13, 2017 10:59 AM IST | Updated on: Nov 13, 2017 10:59 AM IST

کانپور : اترپردیش میں کانپور کے چنداری اسٹیشن کے نزدیک ٹرین میں چھیڑ چھاڑ سے پریشان ہوکر ایک خاتون اپنی بیٹی کے ساتھ چلتی ٹرین سے کود گئی ۔ دونوں کے سر پر سنگین چوٹیں آئی ہیں ۔ انہیں ہیلٹ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ۔

خاتون اپنی بیٹی کے ساتھ جنرل ٹکٹ لے کر دہلی ہاوڑہ اسپیشل ٹرین سے دہلی جارہی تھی ، جیسے ہی ٹرین ہاوڑہ سے نکلی ٹرین میں سوار منچلوں نے خاتون اور اس کی بیٹی کے ساتھ چھیڑ چھاڑ شروع کردی ، اس کی شکایت ٹرین میں موجود پولیس اہلکاروں سے بھی کی گئی ، لیکن پولیس نے دونوں کی کوئی مدد نہیں کی ، جس سے پریشان ہو کر خاتون کانپور ریلوے اسٹیشن کے نزدیک چلتی ٹرین سے کود گئی ۔ دونوں کو سنگین چوٹیں آئی ہیں ۔

چھیڑ چھاڑ سے پریشان ہوکر چلتی ٹرین سے کودی ماں اور بیٹی ، تماشائی کی طرح دیکھتی رہی پولیس

متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ ڈبے میں تین سے چار منچلے موجود تھے ۔ جمعہ کی دیر رات انہوں نے لڑکی سے چھیڑ چھاڑ شروع کردی ۔ خاتون نے جب مخالفت کی تو وہ نہیں مانیں ۔ انہوں نے پولیس سے اس کی شکایت کی ، لیکن وہ بھی بے خوف نظر آئے ۔ ہفتہ کو بیٹی بیت الخلا کی طرف گئی تو تھوڑی دیر بعد بیٹی کی چینخ سنائی دی ، جس کے بعد وہ بھاگ کر باتھ روم تک پہنچی ، وہاں منچلوں نے لڑکی کو دبوچ لیا ، ٹرین کا گیٹ کھلا ہوا تھا ۔ خاتون نے مچلوں کو دھکا دے کر الگ کیا اور چلتی ٹرین سے بیٹی کو لے کر کود گئی ۔ اسٹیشن پر لوگوں نے ایمبولینس کو اطلاع دی ، جس کے بعد دونوں کو اسپتال میں داخل کرایا گیا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز