کانپور ریل حادثے کا سازش کار آئی ایس آئی ایجنٹ نیپال میں گرفتار

Feb 07, 2017 11:42 AM IST | Updated on: Feb 07, 2017 11:43 AM IST

نئی دہلی۔ کانپور کے پكھراياں ریل حادثے کے ماسٹر مائنڈ شمس الہدیٰ کو نیپال میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ قومی جانچ ایجنسی (این آئی اے) کے ذرائع کے حوالے سے مل رہی خبروں کے مطابق آئی ایس آئی دہشت گرد ہدیٰ کو دبئی سے گرفتار کر اس کی نیپال میں حوالگی کی گئی ہے۔ اب اسے ہندوستان لانے کی تیاری کی جا رہی ہے۔

فی الحال، این آئی اے، را اور سی بی آئی کی ٹیم دہشت گرد ہدیٰ  سے پوچھ گچھ کے لئے نیپال پہنچ چکی ہے۔ ہدیٰ پاکستان کی انٹیلی جنس ایجنسی آئی ایس آئی کے لئے کام کرتا ہے اور اسی کے اشارے پر اس نے دبئی میں بیٹھ کر پكھراياں ریل حادثے کو انجام دیا جس میں 150 سے زیادہ لوگوں کی موت ہوئی تھی۔ بتایا جا رہا ہے کہ نیپال اور ہندوستانی تفتیشی ایجنسیوں کے دباؤ میں ہی اسے دبئی سے کھٹمنڈو بھیجا گیا ہے۔

کانپور ریل حادثے کا سازش کار آئی ایس آئی ایجنٹ نیپال میں گرفتار

دراصل نیپال سے گرفتار برج کشور گری کے فون سے ایک آڈیو کلپ ملا تھا۔ اس آڈیو کلپ سے کانپور ریل حادثے کی سازش کا انکشاف ہوا تھا۔ اس آڈیو کلپ کو نیپال پولیس نے این آئی اے سمیت دیگر تفتیشی ایجنسیوں کے حوالے کر دیئے ہیں۔ اس معاملے میں این آئی اے نے حال ہی میں تین ایف آئی آر درج کی ہیں۔ گرفتار شمس الہدیٰ اب نیپال پولیس کی گرفت میں ہے جہاں اس سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔

بتا دیں کہ 21 اکتوبر کو کانپور کے پاس پكھراياں میں ایک بڑا ریل حادثہ ہوا تھا۔ اس حادثے میں اندور-پٹنہ ایکسپریس کے 14 ڈبے پٹری سے اتر گئے تھے۔ حادثہ اتنا خوفناک تھا کہ امدادی ٹیم کو لاشوں کو باہر نکالنے میں 72 گھنٹے سے بھی زیادہ کا وقت لگا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز