کپل مشرا نے مار پیٹ کے واقعہ میں تین ممبران اسمبلی کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی

Jun 03, 2017 03:49 PM IST | Updated on: Jun 03, 2017 03:49 PM IST

نئی دہلی۔  عام آدمی پارٹی (آپ) سے معطل رکن اسمبلی کپل مشرا نے 31 مئی

کو اسمبلی میں کی گئی مارپیٹ کے واقعہ میں اپنی ہی پارٹی کے تین ممبران اسمبلی کے خلاف قتل کی کوشش کرنے کے الزام میں ایف آئی آر درج کرائی ہے۔ مسٹر مشرا نے سول لائنس تھانے میں آج امانت اللہ خان، مدن لال اور جرنیل سنگھ کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی۔ سابق وزیر نے کہا کہ گلا دباکر انہیں مارنے کی کوشش کی گئی۔ انہوں نے

کپل مشرا نے مار پیٹ کے واقعہ میں تین ممبران اسمبلی کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی

کپل مشرا ، فائل فوٹو

الزام لگایا کہ ایوان میں آپ اراکین اسمبلی نے یہ نازیبا سلوک نائب وزیر اعلی منیش سسودیا کے اشارے پر کیا۔ قانون دانوں سے اس معاملے میں رائے لینے کے بعد ایف آئی آر درج کرانے آئے مسٹر مشرا نے کہا کہ مارشل نے انہیں بچایا۔ مسٹر مشرا نے پولیس کو پین ڈرائیو میں واقعہ کا ویڈیو فوٹیج بھی دیا ہے۔

ایف آئی آر درج کرانے سے قبل مسٹر مشرا نے بلاگ پر لکھا، "اسمبلی میں میرا گلا دبانے کی کوشش ہوتی ہے۔ ایک رکن اسمبلی  زورسے اور دیر تک میرا گلا دبائے رکھتے ہیں اور دیگر کچھ رکن اسمبلی مجھ پر حملے کرتے رہتے ہیں۔ یہ تمام واقعہ وزیر اعلی اروند کیجریوال اور نائب وزیر اعلی کی موجودگی میں ہوا۔ نائب وزیر اعلی کچھ ممبران اسمبلی کو اشارہ کرتے ہیں اور وزیر اعلی مسلسل مسکراتے رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ واقعہ کو ہوئے تین دن ہو گئے ہیں لیکن وزیر اعلی نے ممبران اسمبلی کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی اور نہ ہی واقعہ کی مذمت کی۔ مسٹر مشرا نے کہا، "میں خوفزدہ نہیں ہوں گا اور آگے

بھی گھوٹالوں کا پردہ فاش کرتا رہوں گا۔ "

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز