بوا-بھتیجا نے اترپردیش کی سڑکوں کا بیڑا کیا غرق: کیشو پرساد موریہ

Jun 15, 2017 04:38 PM IST | Updated on: Jun 15, 2017 04:38 PM IST

لکھنؤ۔  اترپردیش کے نائب وزیر اعلی اور محکمہ تعمیرات عامہ کے وزیر کیشو پرساد موریہ نے مایاوتی اور اکھلیش یادو پر وزیر اعلی کی حیثیت سے اپنی مدت کار میں سڑکوں کو تباہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے آج دعوی کیا کہ ریاست کی 63 فیصد سڑکیں گڈھوں سے پاک کر دی گئی ہیں۔ مسٹر موریہ نے کہا کہ 'بوا' (محترمہ مایاوتی) اور 'بھتیجے' (اکھلیش یادو) کی حکومتوں نے 15 سال میں ریاست کی سڑکوں کا برا حال کر دیا۔ ان حکومتوں کے کاموں کی تحقیقات کرنی پڑ رہی ہے۔ کچھ کو تو جیل میں بھیجنا پڑ رہا ہے۔ اکھلیش یادو اور ان کی حکومت میں محکمہ تعمیرات عامہ میں وزیر رہے شیو پال سنگھ یادو کو کچھ بھی بولنے کا حق نہیں ہے کیونکہ گڈھے تو وہی چھوڑ گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت 2019 میں پریاگ میں لگنے والے اردھ کمبھ میلے سے پہلے الہ آباد میں اندرونی رنگ روڈ کی تعمیر کرا دے گی۔ اس کے ساتھ ہی پھاپھامئو میں گنگا پر 2400 کروڑ روپے کی لاگت سے چھ لین پل بنایا جائے گا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ اجودھیا سے چترکوٹ تک چار لین 'رام بن گمن' مارگ بنایا جائے گا۔ اس کی تفصیلی پروجیکٹ رپورٹ (ڈی پی آر) بن کر تیار ہے۔ آگے کی کارروائی بھی جلد پوری کر لی جائیگی۔

بوا-بھتیجا نے اترپردیش کی سڑکوں کا بیڑا کیا غرق: کیشو پرساد موریہ

کیشو پرساد موریہ: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز