آر ایس ایس کا الزام ، کیرالہ میں کارکنوں کے قتل میں کمیونسٹ طالبانی ملوث

Aug 04, 2017 08:12 PM IST | Updated on: Aug 04, 2017 08:12 PM IST

نئی دہلی: راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) نے کیرالہ کے حکمراں بایاں محاذ کو کمیونسٹ طالبانی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ریاست میں جمہوری اقدار کو توڑ کر سیاسی انتقام کے لئے اس کے رضاکاروں کو قتل کیا جارہا ہے۔ آر ایس ایس کے سینئر لیڈر دتاتریہ هوسبولے نے یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ کمیونسٹ طالبانی سیاسی انتقام کی وجہ سے آر ایس ایس کے غریب اور دلت رضاکاروں کو چن چن کرقتل کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت میں تمام فریقوں کو اپنی بات رکھنے کا حق ہے لیکن کیرالہ میں سیاسی مخالفت کی وجہ سے مارکسی کمیونسٹ پارٹی کے حامیوں نے تقریبا 300 آر ایس ایس کارکنوں کو قتل کیا ہے۔

ان سے جب یہ پوچھا گیا کہ مرکز میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی حکومت ہے، اس لئے اسے ریاستی حکومت کو برخاست کر کے وہاں صدر راج لگانے کی سفارش کرنی چاہیے تو مسٹر دتاتریہ نے کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ یہ مطالبہ کیا جانا چاہیے۔ ویسے انہیں لگتا ہے کہ کچھ دنوں میں کیرالہ کے لوگ ہی یہ مطالبہ کریں گے۔ آر ایس ایس کے لیڈر نے سلسلہ وار سیاسی قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کیرالہ کے کنور اور ترواننتپورم میں آر ایس ایس کے کارکنوں کے قتل سے پہلے ان کے گھر کے سامنے کیلے کی پتی پر خون لگا کر رکھ دیا جاتا ہے اور اگلے دن اس کا قتل کر دیا جاتاہے ۔ ایسے واقعات کی وجہ سے ہی وہ ٹارگٹ کلنگ کی بات کہہ رہے ہیں۔ کیرالہ میں لاشوں کو کیلے کی پتی پر رکھنے کی روایت ہے۔

آر ایس ایس کا الزام ، کیرالہ میں کارکنوں کے قتل میں کمیونسٹ طالبانی ملوث

file photo

مسٹر دتاتریہ سے جب یہ کہا گیا کہ سی پی ایم کے جنرل سکریٹری سیتا رام یچوری نے کہا ہے کہ کیرالہ کے معاملے میں وہ آر ایس ایس کے لیڈروں کے ساتھ بات چیت کرنے کے لیے تیار ہیں، تو انہوں نے کہا کہ وہ اس کا استقبال کرتے ہیں لیکن ماضی کی جو تاریخ ہے اس سے ان کے دماغ میں شک پیدا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پی ایم اور آر ایس ایس کے رہنماؤں کے درمیان پہلے بھی امن مذاکرات ہوئے ہیں لیکن اس کے کچھ ہی دنوں بعد آر ایس ایس کارکنوں کا قتل کیا جانے لگا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ کیرالہ کے کنور ضلع سے آئی ایس آئی ایس میں سب سے زیادہ لوگ شامل ہوئے ہیں اور جہادی تنظیمیں وہاں کام کر رہی ہیں۔ انہوں نے الزام لگایا کہ سی پی ایم کے کارکنوں کی ساز باز سے یہ سب ہو رہا ہے اور وہ اس کی جانچ کا مطالبہ کرتے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز