Live Results Assembly Elections 2018

مودی کابینہ توسیع : منجھے سیاست داں ، قلم کار اورمعاشرتی خدمت گار ہیں مختارعباس نقوی ، پڑھیں کچھ خاص باتیں

مودی کابینہ میں توسیع کے بعد مرکزی کابینہ میں شامل ہونے والے نئے وزیروں میں اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی ایک منجھے ہوئے سیاست داں، قلم کار ، معاشرتی خدمت گار اور موثر مقررہیں

Sep 03, 2017 01:58 PM IST | Updated on: Sep 03, 2017 01:58 PM IST

نئی دہلی : مودی کابینہ میں توسیع کے بعد مرکزی کابینہ میں شامل ہونے والے نئے وزیروں میں اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی ایک منجھے ہوئے سیاست داں، قلم کار ، معاشرتی خدمت گار اور موثر مقررہیں۔ 1998 میں رام پور سے بی جے پی کے ٹکٹ پر لوک سبھا کے لئے چنے جانے والے پہلے مسلم نمائندے مسٹر نقوی کو جولائی 2016 میں تیسری مرتبہ جھارکھنڈ سے راجیہ سبھا کے لئے منتخب کیا گیا۔

مسٹر نقوی 15 اکتوبر 1957 کوالہ آباد میں پیدا ہوئے۔ الہ آباد یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کی۔ ملک میں ایمرجنسی کا اعلان ہونے پر وہ 1975ء کے دوران جیل بھی گئے۔ اس وقت ان کی عمر صرف سترہ سال تھیں۔ مرکزی حکومت میں قبل ازیں وہ اطلاعات اور نشریات کے وزیر مملکت بھی رہ چکے ہیں۔ انہوں نے دو کتابیں "سياه" اور "دنگا" بھی تصنیف کی ہیں۔

مودی کابینہ توسیع : منجھے سیاست داں ، قلم کار اورمعاشرتی خدمت گار ہیں مختارعباس نقوی ، پڑھیں کچھ خاص باتیں

اصولوں اور سماجی اقدار پر یقین رکھنے والے مسٹر مختار عباس نقوی کو چھاتر یووا سنگھرش واہنی کا سکریٹری چنا گیا تھا جس کی ذمہ داریاں انہوں نے احسن طریقے سے انجام دیں ۔ مسٹر نقوی نے کئی اہم سرکاری اور سیاسی عہدوں پر موثر خدمات انجام دیں اور معاشرتی اور قوم پرستانہ اقدار و نظریات کے پابند رہے ۔ اپنے طویل سیاسی کیریئر میں انہوں نے پارٹی اور حکومت دونوں سطحوں پر اہم ذمہ داریاں اٹھائیں ۔ 2002 میں انہیں بی جے پی کا قومی جنرل سکریٹری اور ترجمان بنایا گیا ۔ 2006سے 2015 تک وہ پارٹی کے نائب صدر رہے ۔ راجیہ سبھا کے لئے وہ پہلی مرتبہ 2002 میں اور دوسری مرتبہ 2010 میں چنے گئے ۔

موجودہ حکومت میں نومبر 2014 میں انہیں اقلیتی وزارت اور پارلیمانی امور کا وزیر مملکت بنایا گیا ۔ 2016کے جولائی میں انہیں وزارت اقلیت کا آزادانہ چارج دیا گیا۔ پارلیمانی امور کے محاذ پر مسٹر نقوی نے اہم کردار ادا کیا اور ایوان بالا میں بی جے پی کے اقلیت میں ہونے کے باوجود انہوں نے پارٹی کے حق میں موثر کردار ادا کیا ۔ پارلیمنٹ میں اپوزیشن کے موثر اشتراک سے انہوں نے کئی اہم بل پاس کرائے ۔ جن میں اینیمی پراپرٹی اور ریئل اسٹیٹ بل شامل ہیں۔

Loading...

اقلیتی امور کی وزارت نے اقلیتوں کے لئے تعلیم اور روز گار کے محاذ پر انہوں نے کئی اہم شروعات کیں اور بنیادی سطح پر بہبودی اسکیمیں نافذ کرنے میں کامیاب رہے۔ انہوں نے خوشامد کے بغیر بااختیار بنانے کی مہم بھی شروع کی ا ور ’’تھری ۔ای‘‘ یعنی ایجوکیشن (تعلیم) ایمپلائمنٹ (روزگار) اور امپاور منٹ (اختیار) کے ذریعہ تمام اقلیتوں کی سماجی ، اقتصادی اور تعلیمی ترقی کو یقینی بنانے کے اپنے عہد کو آگے بڑھاتے رہے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز