ای وی ایم کو لے کر 55 پارٹیوں کے ساتھ الیکشن کمیشن کی میٹنگ آج ، طے ہوگی ہیکنگ کی تاریخ

May 12, 2017 10:13 AM IST | Updated on: May 12, 2017 10:14 AM IST

نئی دہلی : الیکٹرونک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) پر بحث کے درمیان الیکشن کمیشن اس معاملے پر اپنا موقف واضح کرنے کے لئے آج (جمعہ) کو 55 سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں کے ساتھ میٹنگ کرے گا ۔ کمیشن نے ای وی ایم کے قابل بھروسہ ہونے پر بات چیت کرنے کے لئے 7 قومی پارٹیوں اور 48 ریاستی سطح کی پارٹیوں کی میٹنگ بلائی ہے ۔ عام آدمی پارٹی کی طرف سے اس میٹنگ میں سوربھ بھاردواج موجود ہوں گے ۔ اس میٹنگ کے بعد یہ طے ہوگا کہ ای وی ایم کی ہیکنگ کس تاریخ کو رکھی جائے ۔

کمیشن کے ای وی ایم ہیکنگ چیلنج پر اپنے موقف کے بارے میں پارٹیوں کو معلومات دینے کا امکان ہے ۔ مجوزہ میٹنگ سے کچھ دن قبل عام آدمی پارٹی  نے دہلی اسمبلی میں ایک ووٹنگ مشین کی ہیکنگ کرکے بتایا تھا ۔ پارٹی نے اس کے لئے ای وی ایم کے ایک شکل کا استعمال کیا تھا ۔ بتاتے چلیں کہ ای وی ایم میں لوگوں کا اعتماد ختم ہو جانے کا دعوی کرتے ہوئے 16 پارٹیوں نے کمیشن سے بیلٹ کے ذریعے انتخابات کرانے کی درخواست کی تھی ۔

ای وی ایم کو لے کر 55 پارٹیوں کے ساتھ الیکشن کمیشن کی میٹنگ آج ، طے ہوگی ہیکنگ کی تاریخ

ادھر الیکشن کمیشن نے عام آدمی پارٹی کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ یہ ای وی ایم سے ملتی جلتی مشین ہے ، لیکن وہ الیکشن کمیشن کی ای وی ایم نہیں ہے ۔ کل جماعتی میٹنگ کے بعد مجوزہ چیلنج کی تاریخ کے بارے میں فیصلہ کیا جائے گا ۔

کچھ جماعتوں نے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں استعمال کی گئی مشینیں پرکھنے کی اجازت دی جائے ۔ کمیشن نے گزشتہ ہفتہ ایک بیان جاری کرکے کہا تھا کہ ای وی ایم اور وی وی پی اے ٹی سے وابستہ مسائل پر بحث کرنے کے لئے الیکشن کمیشن نے 12 مئی کو نئی دہلی میں تمام تسلیم شدہ قومی اور ریاستی سطح کی سیاسی پارٹیوں کی ایک میٹنگ بلائی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز