زندہ بچہ کو مردہ قرار دینے پر شالیمار باغ کے میکس اسپتال کا دہلی حکومت نے لائسنس کیا منسوخ– News18 Urdu

زندہ بچہ کو مردہ قرار دینے پر شالیمار باغ کے میکس اسپتال کا دہلی حکومت نے لائسنس کیا منسوخ

زندہ نوزائدہ بچے کو مردہ قرار دیئے جانے کے معاملے میں دہلی حکومت نے شمال مغربی دہلی کے میکس سپراسپیشلٹی اسپتال کا لائسنس منسوخ کردیا ہے۔

Dec 08, 2017 07:54 PM IST | Updated on: Dec 08, 2017 07:54 PM IST

نئی دہلی : زندہ نوزائدہ بچے کو مردہ قرار دیئے جانے کے معاملے میں دہلی حکومت نے شمال مغربی دہلی کے میکس سپراسپیشلٹی اسپتال کا لائسنس منسوخ کردیا ہے۔وزیر صحت ستیندر جین نے آج یہاں اخباری کانفرنس میں یہ اطلاع دیتے ہوئے بتایا کہ نوزائدہ بچے کو مردہ قرار دینے والے شالیمار باغ میں واقع میکس اسپتال کا لائسنس منسوخ کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کی لاپرواہی قطعی طور پر برداشت نہیں ہے۔

یہ واقعہ 30 نومبر کا ہے جس کے سامنے آنے پر حکومت نے ایک جانچ کمیٹی تشکیل دی تھی جس نے دو دن پہلے پیش کی گئی اپنی ابتدائی رپورٹ میں اسپتال کو لاپرواہی کا مرتکب بتایا ہے۔

زندہ بچہ کو مردہ قرار دینے پر شالیمار باغ کے میکس اسپتال کا دہلی حکومت نے لائسنس کیا منسوخ

مسٹر جین نے بتایا کہ اس معاملے کی آخری رپورٹ آگئی ہے جس میں اسپتال کی لاپرواہی پائی گئی ہے۔ مجرمانہ لاپرواہی کو قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسپتال کو پہلے بھی نوٹ بھیجے گئے ہیں اور اس کی تین غلطیاں پائی گئیں تھیں ۔ اسپتال کو ’عادی مجرم ‘ قرار دیتے ہوئے مسٹر جین نے کہا کہ یہاں اب نئے مریض بھرتی نہیں کیے جائیں گے ، اسپتال چاہے تو پرانے مریضوں کا علاج جاری رکھ سکتا ہے یا انہیں کہیں اور شفٹ کرسکتا ہے۔

Loading...

Loading...