لوک سبھا الیکشن کیلئے سماجوادی پارٹی کا اعلان ، اکھلیش یادو قنوج اور ملائم سنگھ مین پوری سے لڑیں گے انتخاب

Jun 14, 2018 05:32 PM IST | Updated on: Jun 14, 2018 05:32 PM IST

لکھنو : سماجوادی پارٹی کے صدر اکھلیش یادو نے جمعرات کو ایس پی دفتر میں اعلان کیا کہ 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں وہ قنوج کی سیٹ سے میدان میں اتریں گے۔ اکھلیش نے یہ بھی کہا کہ ملائم سنگھ یادو 2019 کا عام انتخابات لڑیں گے ۔ ملائم ایس پی کے گڑھ مانے جانے والے مین پوری سے الیکشن لڑیں گے۔

خیال رہے کہ اکھلیش یادو نے گزشتہ سال ہی اعلان کیا تھا کہ ان کی اہلیہ اور ایس پی ممبر پارلیمنٹ ڈمپل یادو اب قنوج سے الیکشن نہیں لڑیں گی۔ اس اعلان کے بعد سے ہی یہ قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ اکھلیش اس سیٹ پر دوبارہ الیکشن لڑیں گے۔ 2009 تک اکھلیش اسی سیٹ سے جیت کر لوک سبھا جاتے رہے تھے ، لیکن 2012 کے اسمبلی انتخابات میں سماجوادی پارٹی کی جیت کے بعد اکھلیش وزیر اعلی بنے اور یہ سیٹ ڈمپل کے کھاتے میں چلی گئی۔

لوک سبھا الیکشن کیلئے سماجوادی پارٹی کا اعلان ، اکھلیش یادو قنوج اور ملائم سنگھ مین پوری سے لڑیں گے انتخاب

اکھلیش یادو پریس کانفرنس کے دوران ۔

دراصل اکھلیش ایس پی دفتر میں قنوج کے کارکنوں کے ساتھ میٹنگ کررہے تھے۔ اس دوران انہوں نے علاقہ کی انتخابی تیاری کا جائزہ لیا۔ ڈمپل یادو بھی ان کے ساتھ تھیں ۔ اکھلیش نے کہا کہ قنوج کے بعد سبھی لوک سبھا سیٹ کی تیاریوں کا جائزہ خود لوں گا ۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد میں جانے والی سیٹوں پر وقت رہتے ہوئے یہ یقینی بنایا جائے گا کہ ایس پی کارکنان اتحادی امیدوار کو کامیاب بنائیں ۔

کنبہ پرستی کے معاملہ پر اکھلیش یادو نے کہا بی جے پی اپنی کنبہ پرستی ختم نہیں کررہی ہے ، تو میں نے بھی طے کیا ہے کہ اس مرتبہ میں خود قنوج سے لوک سبھا الیکشن لڑوں گا ۔ ملائم سنگھ یادو کو مین پوری لوک سبھا سیٹ سے کامیاب بنانے کا کام پارٹی کارکنان کریں گے ۔

الیکشن کی حکمت عملی پر کہا کہ جب میں دوسری پارٹیوں کی پالیسی کو سمجھنے کی کوشش کرتا ہوں ، تو سمجھ میں آتا ہے کہ یہ مینجمنٹ کا الیکشن ہے ۔ اب ایس پی بھی اس حکمت عملی میں بی جے پی کو ہرانے کا کام کرے گی۔ کانگریس کی افطار پارٹی میں شامل ہونے کو لے کر کہا کہ شاید ہماری پارٹی کے لوگ گئے ہوں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز