پارلیمنٹ کا مانسون سیشن : کل جماعتی اجلاس کا ترنمول کانگریس نے کیا بائیکاٹ ، جے ڈی یو بھی غیر حاضر

Jul 16, 2017 12:48 PM IST | Updated on: Jul 16, 2017 12:55 PM IST

نئی دہلی : پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے قبل لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن کی صدارت میں آج کل جماعتی میٹنگ ہو رہی ہے۔ کئی پارٹیوں کے نمائندے اس میٹنگ میں شامل ہیں۔ وزیر اعظم مودی، وزیر خزانہ ارون جیٹلی سمیت حکومت کے سربراہ وزرا اجلاس میں موجود ہیں۔ تاہم ترنمول کانگریس نے جہاں اجلاس کا بائیکاٹ کیا تو وہیں جنتادل یونائٹیڈ کے لیڈران بھی میٹنگ میں ندارد ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں کم از کم 16 نئے بل پیش کئے جائیں گے، جن میں جموں و کشمیر گڈس اینڈ سروسز ٹیکس (جی ایس ٹی) بل اور شہریت سے متعلق قانون میں ترمیمی بل شامل ہیں۔ شہریت ترمیمی بل کے ذریعے حکومت غیر قانونی طور پر ہندوستان میں داخل ہونے والے غیر ملکی شہریوں کے ایک خاص طبقہ کو ہندستانی شہریت دینا چاہتی ہے۔مانسون سیشن میں حکومت کی کوشش راجیہ سبھا میں 16 اور لوک سبھا میں 9 پرانے بل کو بھی ٹیبلکروانے کی ہوگی۔

پارلیمنٹ کا مانسون سیشن : کل جماعتی اجلاس کا ترنمول کانگریس نے کیا بائیکاٹ ، جے ڈی یو بھی غیر حاضر

ٹی ایم سی نے اس اجلاس کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا ہے۔ ادھر جے ڈی یو نے بھی کل جماعتی میٹنگ سے دوری بنا لی ہے۔ اگرچہ پارٹی نے بائیکاٹ کی بات سے انکار کیا ہے۔ پارٹی لیڈر کے سی تیاگی نے کہا کہ شرد یادو جی اور پارٹی کے دیگر رہنما مصروف ہیں، اس وجہ سے ہم کل جماعتی میٹنگ میں شامل نہیں ہو پا رہے ہیں۔ انہوں نے صاف کیا کہ یہ بائیکاٹ نہیں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز