اب ہر ماہ ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں چار روپے کا ہوگا اضافہ ، مارچ تک ختم ہوجائے گی سبسڈی

Jul 31, 2017 07:14 PM IST | Updated on: Jul 31, 2017 07:14 PM IST

نئی دہلی : مرکزی حکومت نے سرکاری تیل کمپنیوں سے سبسڈائزڈ ایل پی جی گیس کی قیمت میں ہر ماہ فی سلنڈر 4 روپے اضافہ کرنے کیلئے کہا ہے۔ یہ بات پٹرولیم کے وزیر دھرمیندر پردھان نے پیر کو کہی ہے۔ اس قواعد کا مقصد اگلے سال مارچ تک مکمل سبسڈی کو ختم کرنا ہے۔

قبل ازیں حکومت نے انڈین آئل کارپوریشن ، بھارت پٹرولیم کارپوریشن اور ہندوستان پٹرولیم کارپوریشن سے سبسڈائزڈ ایل پی جی کی قیمت میں ہر ماہ 2 روپے تک کا اضافہ کرنے کیلئے کہا تھا۔ پٹرولیم کے وزیر نے لوک سبھا کو دیے گئے ایک تحریری جواب میں بتایا کہ اب قیمت میں اضافہ کو دوگنا کر دیا گیا ہے، جس سے سبسڈی کو ختم کیا جا سکے۔ ہر گھر کو ایک سال میں سبسڈائزڈ قیمت پر 12 سلنڈر ملتے ہیں ۔ اس کے بعد سلنڈر مارکیٹ کی قیمت پر ملتے ہیں۔

اب ہر ماہ ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں چار روپے کا ہوگا اضافہ ، مارچ تک ختم ہوجائے گی سبسڈی

دہلی میں فی الحال 14.2 کلو گرام والا سبسڈائزڈایل پی جی سلنڈر 477.46 روپے پر ملتا ہے۔ جبکہ گزشتہ سال جون میں یہ 419.18 روپے کا تھا۔ وہیں مارکیٹ قیمت پر ملنے والے ایل پی جی سلنڈر کی قیمت اب 564 روپے ہے۔ وزیر نے بتایا کہ جولائی میں ایل پی جی پر سبسڈی فی سلنڈر 86.54 روپے تھی۔ ملک میں سبسڈائزڈ ایل پی جی سلنڈر کے 18.11 کروڑ صارفین ہیں۔ ان میں 2.5 کروڑ غریب خواتین بھی شامل ہیں، جنہیں گزشتہ ایک سال کے دوران وزیر اعظم اجول اسکیم کے تحت مفت کنکشن دیے گئے تھے۔ نان سبسڈائزڈ ایل پی جی سلنڈر کے صارفین کی تعداد اب 2.66 کروڑ ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز