سابق پاکستانی قومی سلامتی مشیر محمود علی درانی کا اعتراف ، ممبئی حملہ پاکستان میں واقع دہشت گرد تنظیم نے کیا

Mar 06, 2017 05:08 PM IST | Updated on: Mar 06, 2017 05:10 PM IST

نئی دہلی: پاکستان کے سابق قومی سلامتی کے مشیر محمود علی درانی نے آج تسلیم کیا کہ 26/11 کا ممبئی حملہ پاکستان کو مرکز بناکر سرگرم ایک دہشت گرد تنظیم نے کیا تھا۔ مسٹر درانی نے 19 ویں ایشيائی سیکورٹی کانفرنس میں کہا کہ ممبئی حملہ سرحد پار سے کیا گیا حملہ تھا اور پاکستان کو مرکز بناکر سرگرم ایک دہشت گرد تنظیم نے یہ حملہ کیا تھا۔ مسٹر درانی کا یہ اعتراف پاکستان کو پریشانی میں ڈال سکتا ہے کیونکہ وہ ہندوستان میں پاکستان کو مرکز بناکر سرگرم دہشت گرد تنظیموں بالخصوص لشکر طیبہ کا ہاتھ هونے کے بارے میں اس سے ٹھوس ثبوت طلب کرتا رہا ہے۔

پاکستان کی دہشت گرد تنظیم جماعت الدعوة کے سرغنہ حافظ سعید کے بارے میں پوچھے گئے سوال پر این ایس اے درانی نے کہا کہ وہ پاکستان کے لئے بیکار ہے۔ امید ہے کہ پاکستانی حکومت اسے سزا دے گی۔

سابق پاکستانی قومی سلامتی مشیر محمود علی درانی کا اعتراف ، ممبئی حملہ پاکستان میں واقع دہشت گرد تنظیم نے کیا

تاہم درانی نے کہا کہ ممبئی حملہ میں پاکستان کی حکومت اور آئی ایس آئی کا کوئی رول نہیں تھا۔ حافظ سعید کے بارے میں انہوں نے کہا کہ وہ بیکار ہے اور پاکستان کے کسی کام کا نہیں ہے۔ وہیں سرجیکل اسٹرائیک کے سوال پر درانی نے کہا کہ میں نے کوئی سرجیکل اسٹرائیک نہیں دیکھی ۔ نہ کوئی لاش نظر آئی نہ ہی کسی قسم کی کوئی بربادی۔ تاہم انہوں نے کہا کہ پاکستان ہندوستان کے ساتھ دوستی کے بغیر ترقی نہیں کر سکتا ہے۔

دریں اثنا اس معاملہ میں حکومت اور سیاسی جماعتوں کی جانب سے ردعمل بھی سامنے آرہا ہے ۔داخلی امور کے وزیر مملکت کرن رجیجو نے کہا کہ پاکستان کی طرف سے جو بھی بیان آیا ہے ،اس میں کچھ نیا نہیں ہے۔ تو وہیں کانگریس لیڈر شوبھا اوجھا نے کہا کہ آج تک پاکستان اس واقعہ سے انکار کرتا رہا ہے۔ اب جب پاکستان کی طرف سے ایسا تبصرہ آیا ہے تو دہشت گردوں پر جلد کارروائی ہونی چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز