اترپردیش اسمبلی میں ایس پی لیڈر کی سیٹ کے نیچے دھماکہ خیزمواد برآمد ، جانچ این آئی اے کے سپرد

Jul 14, 2017 11:45 AM IST | Updated on: Jul 14, 2017 11:45 AM IST

لکھنؤ : اترپردیش اسمبلی میں ایوان کے اندر دھماکہ خیز مادہ ملنے سے افراتفری مچ گئی ہے۔ اس واقعہ کے بعد وزیر اعلی یوگی نے ایمرجنسی میٹنگ طلب کی اور اس کے بعد ایوان میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ بڑی دہشت گردانہ سازش ہے۔ اس این آئی اے سے تحقیقات کرانی چاہئے۔

ریاست کے ایڈیشنل پولیس ڈائریکٹر جنرل (قانون اور انتظام) آنند کمار نے يو این آئی کو بتایا کہ پی ٹی ای این نامی یہ دھماکہ خیز مادہ سماج وادی پارٹی کے ممبر اسمبلی رام گووند چودھری کی کرسی کے پاس سے برآمد ہوا ہے۔ دھماکہ خیز پاؤڈر کی مقدار 60 گرام ہے۔ فارنسک جانچ میں اس کی تصدیق ہوئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس دھماکہ خیز مادے کے لئے ڈیٹونیٹر کی ضرورت ہوتی ہے، لیکن ڈیٹونیٹر برآمد نہیں ہوئے ہیں۔

اترپردیش اسمبلی میں ایس پی لیڈر کی سیٹ کے نیچے دھماکہ خیزمواد برآمد ، جانچ این آئی اے کے سپرد

انہوں نے تسلیم کیا کہ سیکورٹی میں کوتاہی کے سبب ایسا ہوا ہے، لیکن مکمل جانچ کے بغیر مزید کچھ نہیں کہا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ معاملے کی جانچ ہو رہی ہے۔جانچ کے بعد دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔ کل شام دھماکہ خیز مادہ ملنے کے بعد فوری طور پر اسے تحقیقات کے لئے بھیج دیا گیا تھا۔

ادھر، دھماکہ خیز مادہ برآمد ہونے کے بعد اسمبلی کی حفاظت میں اضافہ کردیا گیا ہے۔ كمانڈو تعینات کر دیے گئے ہیں۔ جگہ جگہ چوکسی برتی جا رہی ہے۔ ماہرین کے مطابق دھماکہ خیز مادہ بہت طاقتور ہے۔ اسمبلی میں محکمہ داخلہ اور پولیس محکمے کے بڑے افسران بھی موجود ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز