بی جے پی لیڈر کا اعلان، ممتا بنرجی کا سر کاٹ کر لانے پر 11 لاکھ روپئے کا انعام

Apr 12, 2017 12:55 PM IST | Updated on: Apr 12, 2017 12:55 PM IST

علی گڑھ ۔ اترپردیش کے علی گڑھ میں بھارتیہ جنتا یوا مورچہ کے ایک مقامی رہنما نے ایک متنازعہ بیان دیا ہے۔ خبر رساں ادارے اے این آئی میں شائع خبر کے مطابق یوگیش وارشنے نام کے اس مقامی لیڈر نے اعلان کیا ہے کہ جو کوئی بھی مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی کا سر کاٹ کر لے آئے گا، اسے 11 لاکھ روپے کا انعام دیا جائے گا۔ یوگیش کا یہ بیان اس خبر کے بعد آیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ ہنومان جینتی کے موقع پر مغربی بنگال کے بیربھوم ضلع میں ایک ریلی نکالی گئی تھی جس میں شامل لوگ بڑھ چڑھ کر جے شری رام کے نعرے لگا رہے تھے جسے منتشر کرنے کے لئے انتظامیہ نے ریلی میں شامل لوگوں پر لاٹھی چارج کا حکم دے دیا تھا۔

یوگیش نے کہا، 'جو شخص ممتا بنرجی کا سر کاٹ کر لے آئے گا میں اسے 11 لاکھ روپے کا انعام دوں گا۔ ممتا بنرجی مغربی بنگال میں نہ تو سرسوتی پوجا ہونے دیتی ہیں، نہ رام نومی کے دوران میلے لگانے دیتی ہیں اور نہ ہی ہنومان جینتی کے دوران جلوس نکالنے دیتی ہیں۔ لوگوں پر لاٹھی چارج کیا جاتا ہے اور ان کو مارا جاتا ہے۔ وہ ہمیشہ افطار پارٹی کرتی ہیں اور مسلمانوں کو خوش کرنے کی کوشش کرتی ہیں۔ '

بی جے پی لیڈر کا اعلان، ممتا بنرجی کا سر کاٹ کر لانے پر 11 لاکھ روپئے کا انعام

تاہم، بی جے پی نے یوگیش کے اس بیان سے پلہ جھاڑ لیا ہے۔ بی جے پی لیڈر کیلاش وجے ورگیہ کے مطابق ممتا جس طرح مسلمانوں کی منھ بھرائی میں لگی رہتی ہیں اس سے لوگ کافی ناراض رہتے ہیں، لیکن ان کی پارٹی اس طرح کے تشدد کی حمایت نہیں کرتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز