الیکشن کمیشن کا چیلنج قبول، ای وی ایم میں چھیڑ چھاڑ ثابت کر کے دکھائیں گے : منیش سسودیا

May 12, 2017 07:23 PM IST | Updated on: May 12, 2017 07:23 PM IST

نئی دہلی: دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا ہے کہ ای وی ایم میں چھیڑ چھاڑ کے مسئلے کے سلسلے میں الیکشن کمیشن نے جو کھلا چیلنج کیا ہے اس کو عام آدمی پارٹی قبول کرتی ہے اور اسے ثابت کرکے دکھائے گی۔ وی ایم کے بارے میں پیدا ہونے والے تنازع اور انتخابی اصلاحات پر تبادلہ خیال کے لئے آج الیکشن کمیشن کی طرف سے بلائی گئی کل جماعتی میٹنگ میں حصہ لینے کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت میں مسٹر سسودیا نے کہا کہ ان کی پارٹی کا دعوی ہے کہ ای وی ایم میں چھیڑ چھاڑ ممکن ہے۔ الیکشن کمیشن اس سلسلے میں کتنا ہی انکار کرے سچائی یہی ہے۔ ان کی پارٹی یہ ثابت کرکے دکھائے گی۔

ای وی ایم کے سافٹ ویئر کو ہیک کرنے کی ڈیمو دہلی اسمبلی میں دے چکے آپ ممبر اسمبلی سوربھ بھاردواج نے کہا کہ الیکشن کمیشن وی ایم کی اصلیت کو چھپا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ای وی ایم کو لے کر الیکشن کمیشن کا موقف واضح نہیں ہے۔ وہ کچھ بھی سننے کو تیار نہیں ہے۔ اجلاس میں کمیشن کا یہ کہنا کہ’’ہم آپ کو اپنی مشین نہیں دیں گے، اس کا ڈیزائن نہیں بتائیں گے کیونکہ پھر آپ اس ہیک کرلیں گے، یہ ثابت کرتا ہے کہ کمیشن اس مسئلے پر تعاون نہیں کرنا چاہتا۔

الیکشن کمیشن کا چیلنج قبول، ای وی ایم میں چھیڑ چھاڑ ثابت کر کے دکھائیں گے : منیش سسودیا

اجلاس میں کمیشن کی جانب سے ای وی ایم مشینوں رکھی گئیں اور یہ ثابت کرنے کے لئے کہ ان کے ساتھ کسی طرح کی چھیڑ چھاڑ ممکن نہیں ہے ووٹنگ میں ان کے استعمال کا سارا عمل کی ایک ایک کرکے تفصیلی تشریح بھی کی گئی۔ اجلاس میں انتخابی اصلاحات پر بھی بحث کی جا رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز