تین طلاق کا فائدہ لینے میں کانگریس ناکام رہی ، اگر مودی حکومت واقعی فکرمند ہے تو قانون بنائے : منیش تیواری

کانگریس کے سینئر لیڈر منیش تیواری نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے تین طلاق کے معاملے پر تاریخی فیصلے کا کانگریس پورا فائدہ اٹھا سکتی تھی لیکن وہ اس کیلئے مناسب حکمت عملی نہیں بنا سکی۔

Aug 27, 2017 06:15 PM IST | Updated on: Aug 27, 2017 06:15 PM IST

نئی دہلی: کانگریس کے سینئر لیڈر منیش تیواری نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے تین طلاق کے معاملے پر تاریخی فیصلے کا کانگریس پورا فائدہ اٹھا سکتی تھی لیکن وہ اس کیلئے مناسب حکمت عملی نہیں بنا سکی۔ مسٹر تیواری نے خبر رساں ایجنسی یونائٹیڈ نیوز آف انڈیا (یو این آئی) کے ہیڈکوارٹر میں نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا کہ عدالت کا فیصلہ تاریخی ہے اور یہ کانگریس کیلئے سیاسی فائدہ حاصل کرنے کا اچھا موقع ہوسکتا تھا لیکن پارٹی اس موقع پر فائدہ اٹھانے میں ناکام رہی ہے جبکہ بھارتیہ جنتا پارٹی پوری طاقت کے ساتھ اس کا فائدہ لینے کی کوشش کر رہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ اگر حکومت مسلم خواتین کی حالت زار پر واقعی فکرمند ہے تو اسے ان کے فائدے کیلئے قانون بنانا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ یہ فیصلہ بہت اچھا اور بالکل درست ہے۔ ملک کے شہریوں کی آزادی پر یقین رکھنے والے لوگ اس کے معنی سمجھتے ہیں اور وہ عدالت کے فیصلے کی حمایت کر رہے ہیں۔ بی جے پی کا شمار سیکولر پارٹیوں میں نہیں ہوتا اور وہ خواتین مخالف بھی ہے۔ یہ فیصلہ ایک خاص برادری سے وابستہ ہونے کے باوجود بی جے پی اس کا فائدہ لینے میں مصروف رہی۔ انہوں نے کہاکہ سیکولر پارٹی ہونے کے ناطے کانگریس بہ آسانی اس کا سیاسی فائدہ لے سکتی تھی۔

تین طلاق کا فائدہ لینے میں کانگریس ناکام رہی ، اگر مودی حکومت واقعی فکرمند ہے تو قانون بنائے : منیش تیواری

سینئر کانگریس لیڈر اور پارٹی ترجمان منیش تیواری: فائل فوٹو۔

کانگریس کے سینئر ترجمان نے تین طلاق کے سلسلے میں شاہ بانو معاملے کا ذکر کرتے ہوئے کہاکہ سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کی حکومت کے دوران جب یہ فیصلہ آیا تھا تو کانگریس کیلئے ایک چیلنج بن گیا تھا۔شاہ بانو کے معاملے میں عدالت کا فیصلہ مسلم خواتین کیلئے اہم تھا لیکن اسے ’بہت غلط‘ سمجھا گیا جبکہ اس میں طلاق کے بعد مسلم خواتین کو اخراجات کا دعوی کرنے کا حق ملا تھا۔ انہوں نے کہاکہ شاہ بانو معاملہ کا جو بھی نتیجہ رہا ہو لیکن تین طلاق پر آیا فیصلہ پارٹی کیلئے اچھا موقع تھا۔

یہ پوچھنے پرکہ تین طلاق کو مودی حکومت اپنی کامیابی قرار دے کر اس کی تشہیر کر رہی ہے اور الیکشن میں اس کا فائدہ اٹھا سکتی ہے، مسٹر تیواری نے کہاکہ یہ عدالت کا فیصلہ ہے اور انہیں نہیں لگتا کہ بی جی پی کو اس کا سیاسی فائدہ ملے گا۔ اس کیلئے حکومت عدالت نہیں گئی تھی۔ انہوں نے کہاکہ مودی حکومت سے لوگ پریشان ہو رہے ہیں اور سیاسی صورتحال میں تبدیلی آ رہی ہے اور 2019 کے عام انتخابات تک کیا صورتحال ہوگی اس کے بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا جاسکتا۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز