عقیدت کے نام پر تشدد ناقابل برداشت ، قانون ہاتھ میں لینے والے کسی بھی شخص کو بخشا نہیں جائے گا : مودی

Aug 27, 2017 11:50 AM IST | Updated on: Aug 27, 2017 12:12 PM IST

نئی دہلی: سادھوی جنسی استحصال کیس میںبابا گرمیت رام رحیم کو قصوروار ٹھہرائے جانے کے بعد ہریانہ ، پنجاب ، دہلی اور اتر پردیش میں ڈیرہ حامیوں کے تشدد پر وزیر اعظم مودی نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعظم مودی نے اپنے من کی بات پروگرام میں کہا کہ عقیدت کے نام پر تشدد کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ ملک کے ہر شہری کو قانون کا احترام کرنا ہوگا۔ کسی کو بھی قانون کو ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں ہے۔ وزیراعظم مودی نے مزید کہا کہ اس ملک میں ہر کسی کو انصاف حاصل کرنے کا حق ہے۔

وزیر اعظم مودی نے کہا کہ بابا بھیم راو امبیڈکے بنائے قانون میں تشدد کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ اگر کوئی شخص یا کوئی تنظیم تشدد کرتی ہے یا قانون ہاتھ میں لیتی ہے تو کوئی بھی حکومت اسے برداشت نہیں کرے گی۔

عقیدت کے نام پر تشدد ناقابل برداشت ، قانون ہاتھ میں لینے والے کسی بھی شخص کو بخشا نہیں جائے گا : مودی

فائل فوٹو

خیال رہے کہ جمعہ کو پنچ کولہ سی بی آئی عدالت میں ڈیرہ سچا سربراہ رام رحیم کو جنسی استحصال کے معاملے میں قصوروار قرار دیا گیا تھا، جس كے بعد گرمیت رام رحیم کے حامیوں نے پنچ کولہ اور سرسا سمیت ہریانہ ، پنجاب ، دہلی اور اترپردیش کے کئی علاقوں میں تشدد اور آگ زنی کی تھی ۔ اس تشدد میں 36 افراد کی موت جبکہ سینکڑوں زخمی ہو گئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز