یوپی میں بی جے پی ممبران اسمبلی کی میٹنگ، وزیر اعلی کے لئے منوج سنہا کا نام تقریبا طے

Mar 18, 2017 12:35 PM IST | Updated on: Mar 18, 2017 12:35 PM IST

لکھنئو۔ اتر پردیش میں نئی ​​حکومت کی تشکیل کو لے کر کوششیں تیز ہو گئی ہیں۔ یوپی میں بی جے پی حکومت کی باگ ڈور سنبھالنے والے وزیر اعلی کے نام پر ہفتہ کی دیر شام تک فیصلہ کیا جائے گا۔ ادھر، مقامی انتظامیہ بھی اتوار کو نئی حکومت کی حلف برداری کو لے کر تیاریوں کو حتمی شکل دینے میں مصروف ہے۔ وزیر اعلی کے نام کا باضابطہ اعلان ہونا باقی ہے۔ لیکن بی جے پی ذرائع کے مطابق ریلوے وزیر مملکت منوج سنہا کا نام تقریبا طے کر لیا گیا ہے۔

لکھنؤ کے لوک بھون میں ہفتہ کی شام 4.30 بجے ہونے والی بی جے پی ممبران اسمبلی کی میٹنگ میں پارٹی کے ممبر اسمبلی اپنے لیڈر کا انتخاب کریں گے۔ اس کے بعد ہی گورنر سے مل کر حکومت بنانے کا دعوی پیش کیا جائے گا۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی موجودگی میں 19 مارچ کو لکھنؤ اسمرتی اپون میں دوپہر 2.15 بجے حلف برداری کی تقریب ہو گی۔ پہلے یہ تقریب شام کو 4.30 بجے ہونا تھی۔ لیکن جمعہ کی شام کو ایس پی جی افسران کی میٹنگ کے بعد اسے بدل دیا گیا۔

یوپی میں بی جے پی ممبران اسمبلی کی میٹنگ، وزیر اعلی کے لئے منوج سنہا کا نام تقریبا طے

حلف برداری کی تیاریوں میں لگے ریاستی پراپرٹی محکمہ کے ڈائریکٹر برجراج سنگھ یادو نے بتایا کہ حلف برداری کو لے کر تیاریاں آخری مرحلے میں ہیں۔ اتوار کو دوپہر 2.15 بجے کا وقت مقرر کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق مرکزی قیادت نے وزیر اعلی کا نام پہلے سے طے کر لیا ہے اور اس پر پارٹی اراکین کی مہر لگائی جائے گی۔ وزیر اعلی کے عہدے کے لئے منوج سنہا کے علاوہ بی جے پی ریاستی صدر کیشو پرساد موریہ کا نام بھی سیاسی گلیاروں میں چرچا میں ہے۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے لے کر یوگی آدتیہ ناتھ، دنیش شرما کے ناموں کے قیاس بھی ابھی تک چل رہے ہیں۔

ہفتہ کو ہونے والی پارٹی اراکین کی میٹنگ میں دہلی سے مرکزی اطلاعات و نشریات کے وزیر وینکیا نائیڈو اور پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری بھوپندر یادو آبزرور کے طور پر دوپہر تک لکھنؤ پہنچیں گے۔ بی جے پی کے تمام 312 اراکین اسمبلی کو فون کر کے پارٹی کے ریاستی صدر دفتر میں بلایا گیا ہے۔ اس کے بعد ان ممبران اسمبلی کو ہیڈ کوارٹر سے ملحق لوک بھون لے جایا جائے گا۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز