جھنڈا نگر: مولانا عبدالحنان فیضی سپرد خاک، نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت

جھنڈا نگر۔ استاذ الاساتذہ، مفتی ٔ جامعہ سراج العلوم السلفیہ جھنڈا نگر، نیپال مولانا عبدالحنان فیضی کو آج بعد نمازظہرجھنڈا نگر کی قبرستان میں ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔

Feb 04, 2017 07:26 PM IST | Updated on: Feb 04, 2017 07:27 PM IST

            جھنڈا نگر۔ استاذ الاساتذہ، مفتی ٔ جامعہ سراج العلوم السلفیہ جھنڈا نگر، نیپال مولانا عبدالحنان  فیضی کو آج بعد نمازظہرجھنڈا نگر کی قبرستان میں ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ ان کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ نماز جنازہ صاحب تحفۃ الاحوذی کے صاحبزادے مولانا عبدالرحمن مبارکپوری نے پڑھائی جس میں علماء وفضلاء اور علاقہ کی مقتدر سیاسی وسماجی شخصیات کے علاوہ مولانا کے شاگردوں کی ایک اچھی خاصی تعداد موجود تھی۔ مولانا کا گزشتہ  رات  ۱۰؍بجے  مختصر علالت کے بعد۸۳؍سال کی عمرمیں انتقال ہوگیا تھا۔

            واضح ہوکہ مولاناعبدالحنان فیضی بن مولانا محمد زماں کا تعلق ضلع سدھارتھ نگرکے  شہرت گڑھ  کے معروف گاؤں انتری بازارسے تھا۔ ان کی پیدائش دسمبر۱۹۳۴ء میں ہوئی تھی ۔ پرائمری کی تعلیم مدرسہ بحرالعلوم انتری بازارمیں حاصل کی،اس کے بعد ششہنیاں اوردوسال جامعہ سراج العلوم جھنڈا نگرسے حصول تعلیم کے بعد آپ مدرسہ فیض عام مئوناتھ بھنجن چلے گئے جہاں معروف علماء کرام سے آپ نے اکتساب فیض کیا۔ وہاں سے فراغت کے بعد جامعہ سراج العلوم السلفیہ جھنڈا نگراورجامعہ سلفیہ بنارس میں درس وتدریس کے فرائض انجام دیئے ۔

جھنڈا نگر: مولانا عبدالحنان فیضی سپرد خاک، نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت

جامعہ سلفیہ(مرکزی دارالعلوم) بنارس میں چارسال تدریس کے پیشہ سے وابستہ  رہنے کے بعد خطیب الاسلام مولاناعبدالرؤف رحمانی جھنڈا نگری رحمہ اللہ  کی دعوت پروہ جامعہ سراج العلوم جھنڈا نگرتشریف لے آئے  اورتاحیات یہیں افتاء اورتدریسی فرائض انجام دیتے رہے۔

jhanda nagar, nepal

 مولانا درس وتدریس کے علاوہ جمعیت اہل حدیث ضلع سدھارتھ نگرکے حلقہ بڑھنی سے کئی بارناظم رہے اورآج ان کے صاحبزادے مولاناعبدالمنان سلفی ؍استاد جامعہ سراج العلوم السلفیہ جھنڈا نگرضلعی جمعیت اہل حدیث سدھارتھ نگرکے ناظم اعلی ہیں۔ مولانا کے معروف شاگردوں میں معروف عالم دین جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم اعلی مولاناصلاح الدین مقبول احمد کویت،مفتی ٔ حرم ڈاکٹروصی اللہ عباس مدنی، ڈاکٹرفتح الباری مدنی، استادجامعۃ الملک سعودریاض،ڈاکٹررضاء اللہ مبارک پوری ،مولانامحمد مستقیم سلفی؍استادجامعہ سلفیہ بنارس،مولاناعبدالمعیدمدنی علی گڑھ،ڈاکٹرعزیرشمس پروفیسرجامعہ ام القریٰ مکہ مکرمہ اور مولاناعبدالواحد مدنی ڈومریاگنج سرفہرست ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز