مولانا بدر الدین اجمل کا وزیر اعظم اور وزیر داخلہ کو خط ، مسلم قیدیوں کیلئے جیلوں میں سحری اور افطار کے معقول انتظام کا مطالبہ

May 31, 2017 08:14 PM IST | Updated on: May 31, 2017 08:14 PM IST

نئی دہلی : آل انڈیا یونائیٹیڈ ڈیموکریٹک فرنٹ کے قومی صدر اور رکن پارلیمنٹ مولانا بدرالدین اجمل قاسمی نے وزیر اعظم اورمرکزی وزیر داخلہ کوخطوط لکھ کر ان سے مطالبہ کیا ہے کہ مضان المبارک کے مہینہ میں مسلم قیدیوں کے لئے سحری اور افطار کا مناسب انتظام کیا جائے۔

انہوں نے اپنے خط میں کہا ہے کہ روزہ رکھنے والے مسلم قیدیوں کو پریشانی کا سامنا نہ کر نا پڑتا ہے اس انتظام سے انہیں آسانی ہوجائے گی۔ انہوں نے مزید مطالبہ کیا کہ چونکہ مسلمانوں کا اس بات پر ایمان ہے کہ رمضان رحمت اور برکت کا مہینہ ہے اور اس مہینہ میں اللہ کی خاص عنایت ہوتی ہے اس لئے اس ماہِ مبارک میں روزہ دار قیدیوں سے زیادہ محنت والا کام نہ لیا جائے اور ان سے نرمی کا معاملہ کیا جائے۔

مولانا بدر الدین اجمل کا وزیر اعظم اور وزیر داخلہ کو خط ، مسلم قیدیوں کیلئے جیلوں میں سحری اور افطار کے معقول انتظام کا مطالبہ

مولانا جو جمعیۃ علماء ہند صوبہ آسام کے صدربھی ہیں ،نے لکھا کہ آپ بخوبی واقف ہیں کہ ملک کی جیلوں میں ہزاروں کی تعداد میں مسلم قیدی ہیں جو رمضان کا روزہ رکھتے ہیں اور مرکزی حکومت کی جانب سے اس سلسلہ میں گائیڈلائن موجود ہے کہ ان کے لئے سحری اور افطار کا انتظام کیا جائے اس کے باوجود بہت سی جیلوں میں اس پر عمل نہیں کیا جاتا ہے بلکہ رمضان میں نہ صرف انہیں عام دنوں والا کھانا دیا جاتا ہے بلکہ روزہ رکھنے والے قیدیوں کے ساتھ رعایت کرنے کی بجائے انہیں تنگ کیا جاتا ہے۔

مولانانے ان سب باتوں کا حوالہ دیتے ہوئے مطالبہ کیا کہ اس سلسلہ میں ملک کے تمام جیلوں کے ذمہ داران کو خصوصی ہدایت دی جائے کہ روزہ رکھنے والے مسلم قیدیوں کو سحری کے وقت دودھ وغیرہ اور افطار کے وقت پھل اور شربت وغیرہ کا انتظام کیا جائے، نیزانہیں ایک ساتھ جمع ہوکر نماز باجماعت ادا کر نے کی اجازت دی جائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز