میکس اسپتال کا شرمناک كارنامہ، جس بچہ کو مردہ قرار دے کر اہل خانہ کو سونپ دیا وہ نکلا زندہ ، جانچ کا حکم

Dec 01, 2017 07:49 PM IST | Updated on: Dec 01, 2017 07:49 PM IST

نئی دہلی: شمالی مغربی دہلی کے پاش علاقے شالیمار باغ میں واقع مشہور میکس اسپتال میں ڈاکٹروں کی غفلت کا ایک بڑا معاملہ سامنے آیا ہے۔ اسپتال میں پیدا ہونے والے جڑواں بچوں کو مردہ قرار دے کر ان کی لاش اہل خانہ کو سونپ دی گئی جبکہ ان میں ایک بچہ زندہ تھا۔ اس واقعہ کے بعد اہل خانہ نے اسپتال میں ہنگامہ کیا جس کے بعد پولس نے معاملے کی جانچ شروع کر دی ہے۔

شالیمار باغ کے میکس اسپتال میں کل ایک خاتون نے جڑواں بچوں کو جنم دیا۔ اس میں ایک لڑکا اور ایک لڑکی تھی ۔ بچی کی موت پیدائش کے دوران ہی ہو گئی جبکہ دوسرے بچے کا علاج شروع کیا گیا۔ اسپتال نے ایک گھنٹے بعد بتایا کہ دوسرے بچے کی بھی موت ہو گئی ہے۔ اس کے بعد دونوں بچوں کی لاشیں لپیٹ کر اہل خانہ کو سونپ دی گئیں۔ خاندان والے دونوں کی لاشیں لے کر اسپتال سے روانہ ہوئے تو کچھ دور جانے پر ایک لاش میں حرکت ہوئی جس کے بعد اس کی پیٹی کو کھولا گیا تو بچہ زندہ نکلا۔ گھر والوں نے بچے کو نزدیکی اسپتال میں داخل کرایا جہاں ماں اور بچے کا علاج چل رہا ہے۔

میکس اسپتال کا شرمناک كارنامہ، جس بچہ کو مردہ قرار دے کر اہل خانہ کو سونپ دیا وہ نکلا زندہ ، جانچ کا حکم

دہلی پولس کے ترجمان دیپیندر پاٹھک نے اسپتال کی اس کارستانی پر سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے اسے بہت ہی شرمناک واقعہ بتایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ لاپرواہی کی انتہا ہے اور پولیس اس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے اور قانونی ماہرین سے بھی اس معاملے پر مشورہ کیا جا رہا ہے۔ دریں اثناء، مرکزی وزیر صحت جگت پرکاش نڈا نے میکس اسپتال کی اس لاپرواہی کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے صحت سیکرٹری سے بات چیت کر معلومات طلب کی ہیں۔ شمال مغربی دہلی کے ڈپٹی کمشنر اسلم خان نے کہا کہ اس معاملے میں بچوں کے والدین سے شکایت ملی ہے ، جس پر ضابطے کے مطابق تحقیقات شروع کر دی گئی ہے اور پولیس اس معاملے میں جو بھی حقائق جمع کرے گی اسے دہلی طبی کونسل اور قومی طبی کونسل کو سونپ کر آگے کی کارروائی کی جائے گی۔

اسپتال نے اس واقعہ کے بعد بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ "22 ہفتے سے پہلے پید ا ہوئے بچوں" کے زندہ رہنے کا کوئی اشارہ نہیں ملنے کی وجہ سے گھر والوں کے حوالے کر گیا تھا۔اسپتال اس غیر متوقع واقعہ سے فکر مند ہے۔ معاملے کی تفصیلی تحقیقات شروع کر دی گئی اور تحقیقات کے پیش نظر متعلقہ ڈاکٹر کو فوری طور پر چھٹی پر بھیج دیا گیا ہے۔ اسپتال والدین سے مسلسل رابطہ بنائے ہوئے ہے اور ہر ممکن مدد فراہم کر رہا ہے۔

دوسری جانب دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے شالیمار باغ کے میکس اسپتال میں زندہ بچے کو مردہ بتا کر وارثین کو سونپنے کے واقعہ کو دل دہلا دینے والا واقعہ بتایا ہے اور اس کی جانچ کا حکم دیا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ اس واقعہ کو مسٹر کیجریوال نے دل دہلا دینے والی بتاتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ انہوں نے ٹویٹر پر لکھا ہے کہ پورے معاملے کی تفصیلی اور مناسب چھان بین کی جانی چاہئے اور جو بھی قصوروار پایا جائے اس کے خلاف سخت کارروائی کی جانی چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز