جنوبی کشمیر کے پلوامہ میں محمد یوسف لون کی گولیوں سے چھلنی لاش برآمد ، مظاہرے شروع

May 19, 2017 12:34 PM IST | Updated on: May 19, 2017 03:46 PM IST

سری نگر: جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے نیوہ علاقہ میں جمعہ کے روز ایک 45 سالہ شخص کی گولیوں سے چھلنی لاش برآمد کی گئی۔ لاش کی برآمدگی کے بعد مقتول شخص کے آبائی گاؤں گڈورہ میں بڑے پیمانے پر احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے نیوہ میں جمعہ کی صبح اُس وقت خوف و ہراس پھیل گیا جب کچھ مقامی لوگوں نے علاقہ سے گذرنے والے ایک نالہ میں ایک لاش دیکھی۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس کو مطلع کیا گیا جس کے بعد ایک پولیس پارٹی کی موجودگی میں لاش نالے سے باہر نکالی گئی۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ مہلوک شخص کی شناخت محمد یوسف لون ساکنہ گڈورہ کے بطور کی گئی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ محمد یوسف جمعرات کی صبح سے لاپتہ تھے۔ مقامی لوگوں کے مطابق مہلوک کے جسم میں دو گولیاں پیوست ہوئی تھیں۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق جب گڈورہ کے رہائشیوں کو محمد یوسف کی ہلاکت کی اطلاع ملی تو انہوں نے بھاری تعداد میں سڑکوں پر آکر احتجاج کرنا شروع کردیا۔ انہوں نے محمد یوسف کے قاتلوں کا فوری پتہ لگانے اور انہیں کیفرکردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے۔

جنوبی کشمیر کے پلوامہ میں محمد یوسف لون کی گولیوں سے چھلنی لاش برآمد ، مظاہرے شروع

file photo

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پولیس نے معاملہ درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے۔ یہ جنوبی کشمیر میں گذشتہ 48 گھنٹوں کے دوران لاش کی برآمدگی کا دوسرا واقعہ ہے۔ 17 مئی کو پلوامہ اور شوپیان کو منقسم کرنے والی ایک ندی سے ایک سابق جنگجو کی لاش برآمد کی گئی تھی۔ مقامی میڈیا کی رپورٹوں میں پولیس ذرائع کے حوالے سے کہا جارہا ہے کہ محمد یوسف ماضی میں جنگجوؤں کے لئے بحیثیت بالائی زمین ورکر کام کررہا تھا۔ تاہم تاحال کسی بھی تنظیم نے اس ہلاکت کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز