نکسل زدہ ریاستوں کے وزرائے اعلی کی وزیر داخلہ راجناتھ کے ساتھ میٹنگ

May 08, 2017 02:57 PM IST | Updated on: May 08, 2017 02:57 PM IST

نئی دہلی۔ چھتیس گڑھ کے سکما میں سینٹرل ریزرو پولیس فورس(سی آر پی ایف) کے جوانوں کے شہید ہونے کے بعد نکسلیوں پر لگام کسنے کےلئے مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نکسل متاثرہ ریاستوں کے وزرائے اعلی کے ساتھ آج یہاں میٹنگ کریں گے۔ دارالحکومت کے سائنس سینٹر میں منعقد اس میٹنگ میں چھتیس گڑ،آندھرا پردیش،جھارکھنڈ،اڑیسہ،بہار،مدھیہ پردیش،مغربی بنگال اورتلنگانہ کے وزرائے اعلی کو مدعو کیا گیا ہے۔ میٹنگ میں مسٹر سنگھ کے علاوہ ریلوے کے وزیر سریش پربھو اور شہری ہوابازی کے وزیر جینت سنہا، دیہی ترقی کے وزیر نریندر سنگھ تومر اور وزیرتوانائی پیوش گوئل اور وزیر مواصلات منوج سنہا کے علاوہ وزارت داخلہ کے سینئرافسر،ریاستوں کے چیف سکریٹری اور نکسل متاثرہ ریاستوں کے پولیس ڈائریکٹر جنرل بھی شامل ہوں گے۔

دو سیشن میں چلنے والی اس میٹنگ میں مرکزی مسلحہ پولیس فورس کی نکسلیوں کے خلاف کارروائی اور خفیہ نظام کو مضبوط بنانے اور ریزرو بٹالین اور اسپیشل ریزرو بٹالین کی تشکیل وغیرہ اور ترقی کے کاموں کو تیز کرنے پر التوا منصوبوں کو پورا کرنے وغیرہ کے بارے میں غوروخوض کیا جائے گا۔میٹنگ میں نکسلیوں کے خلاف کارروائی کرنے کی نئی حکمت عملی بنانے پر بھی خاص توجہ مرکوز کی جائے گی تاکہ 2016کی طرح اس سال اور مستقبل میں بھی نکسلیوں پر لگام کسنے میں کامیابی مل سکے۔ حکومت نکسل واد سے نمٹنے کےلئے ہر قسم کے اقدامات کر رہی ہے جس میں سکیورٹی کے علاوہ ترقیاتی کاموں اور مقامی قبائلیوں کے حقوق کی حفاظت کرنا اور انہیں انصاف دلانا بھی شامل ہے۔ سکما کے واقعہ کے بعد سے مرکزی حکومت اور ریاستی حکومت کی ایک بار پھر تنقید کی جانے لگی تھی کہ نکسلی تشدد پرقابو پانے میں حکومت کی مشینری ناکام رہی ہے اسی لئے سیکورٹی کے پختہ انتظامات کئے جانے ضروری ہیں اور اس مسئلہ کو روکنے کے لئے نئی طرح کی حکمت عملی بنائی جانی ضروری ہے۔

نکسل زدہ ریاستوں کے وزرائے اعلی کی وزیر داخلہ راجناتھ کے ساتھ میٹنگ

وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نکسل زدہ ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ اور چند مرکزی وزرا کے ساتھ ایک میٹنگ میں نکسلی مسئلہ سے نمٹنے کے لئے تبادلہ خیال کرتے ہوئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز