کیا کشمیر کی فضا خراب کرنے میں پاکستان کے ساتھ چین کا بھی ہاتھ؟

Jul 15, 2017 04:43 PM IST | Updated on: Jul 15, 2017 04:43 PM IST

نئی دہلی ۔  جموں و کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے آج تسلیم کیا کہ کشمیر میں قانون و انتظام کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ ہم غیر ملکی طاقتوں سے جنگ لڑ رہے ہیں جس میں چین نے بھی ہاتھ ڈال دیا ہے۔ محترمہ مفتی نے یہاں مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے کہا کہ ریاستی حکومت قانون و انتظام کی لڑائی نہیں لڑ رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جو لڑائی ہورہی ہے ، اس میں باہر کی طاقتیں شامل ہیں اور اب تو چین نے بھی درمیان میں آکر ہاتھ ڈالنا شروع کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب تک پورا ملک، سیاسی جماعتیں ساتھ نہیں دیتیں تب تک یہ جنگ نہیں جیت سکتے ۔ مجھے خوشی ہے کہ سیاسی جماعتیں متحد ہوگئی ہیں اور کشمیر کے مسئلہ کا کھل کر ایک ساتھ مقابلہ کررہی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں جموں و کشمیر میں دفعہ 370کا مکمل دفاع کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب جی ایس ٹی ہم نے منظور کیا تب صدر نے زور دیا تھا کہ دفعہ 370کا خاص خیال رکھا جائے۔ دفعہ 370ہمارے جذبات کے ساتھ وابستہ ہے۔

کیا کشمیر کی فضا خراب کرنے میں پاکستان کے ساتھ چین کا بھی ہاتھ؟

کشمیر: فائل فوٹو

محترمہ مفتی کی مرکزی وزیر داخلہ سے ملاقات اسے وقت میں ہوئی ہے جب حکومت اپوزیشن لیڈروں کو بلا کر انہیں چین کے ساتھ سکم سرحد پر جاری تعطل اور امرناتھ یاتریوں پر حملہ کے سلسلے میں پوری صورت حال سے آگاہ کرارہی ہے۔ کل شام ہوئی اس میٹنگ میں مسٹر سنگھ کے علاوہ وزیر خارجہ سشما سوراج ، وزیر خزانہ اور وزیر دفاع ارون جیٹلی اور قومی سلامتی مشیر اجیت ڈوبھال شامل ہوئے۔ خارجہ سکریٹر ی اور داخلہ سکریٹری نے بالترتیب چین اور امرناتھ حملے کی تفصیلی جانکاری دی۔ کل شام کی میٹنگ میں مختلف جماعتوں کے 19ممبران پارلیمنٹ نے میٹنگ میں حصہ لیا جب کہ آج شام ہونے والی میٹنگ میں دیگر جماعتوں کے رہنما شامل ہوں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز