نائیجیریا دورے سے بیچ میں نہیں ، دو دن بعد اتوار کو لوٹیں گے ایم جے اکبر

اپوزیشن جہاں بار ۔ بار اکبر کے استعفے کا مطالبہ کر رہا ہے وہیں اکبر نے اپنا ٹرپ گھٹانے کے بجائے دو دن کیلئے بڑھا دیا ہے۔

Oct 11, 2018 08:38 PM IST | Updated on: Oct 11, 2018 08:39 PM IST

مرکزی وزیر ایم اجے اکبر پراب تک 9 خواتین نے جنسی استحصال کا الزام لگایا ہے۔ اکبر نائیجیریا گئے تھے۔ خبرہے کہ اکبر اپنا ٹرپ درمیان میں ہی ختم کرکے ہندستان لوٹ سکتے ہیں لیکن ایسا نہیں ہو رہا ہے ۔

اپوزیشن جہاں بار ۔ بار اکبر کے استعفے کا مطالبہ کر رہا ہے وہیں اکبر نے اپنا ٹرپ گھٹانے کے بجائے دو دن کیلئے بڑھا دیا ہے۔ افسران نے بتایا کہ وہ ایکاٹوریل گوئینا کا دورہ کرنے کے بعد ہی لوٹیں گے ۔ اس حاساب سے مانا جا رہا ہے کہ اکبر اتوار تک ہی ملک لوٹ پائیں گے۔

نائیجیریا دورے سے بیچ میں نہیں ، دو دن بعد اتوار کو لوٹیں گے ایم جے اکبر

ایم جے اکبر : فائل فوٹو

اکبر کے مستقبل پر سوچ سمجھ کر لیا  جائے گا فیصلہ

اکانامک ٹائمس کی رپورٹ کے مطابق ، حکومت اور پارٹی کے ایک بڑے افسر نے بتایا کہ اکبر کے مستقبل پر سوچ سمجھ کر فیصلہ لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ معاملہ ابھی زیر غور ہے لیکن ان کجواب بھی اہمیت رکھتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس مسئلے پر بیجے پی اور حکومت کے درمیان بھی چرچا ہوئی ہے۔

 انہوں نےکہا ہمیں فیصلہ لینے میں ہمیں احتیاط برتنی ہوگی۔ ہم نہیں چاہتے ہیں کہ اس میں گھٹنے ٹینئے جیسا عمل ہو۔ یہ خواتین کے تحفظ کے بارے میں ہے جو وزیر اعظم کیلئے ایک اہم مسئلہ ہے۔ اس لئے اسے اندیکھا نہیں کیا جا سکتا ہے۔ افسر نے کہا کہ اکبر پر لگائے گئے کچھ معاملے بہت سنگین ہیں ۔

می ٹو مہم کے تحت کچھ خواتین صحافیوںنے اکبر پر الزام لگائے ہیں کہ صحافی رہنے کے دوران انہوں نے جنسی استحصال کیا تھا۔ ان الزاموں پر ایم جے  اکبر کا کوئی رد عمل نہیں آیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز