آر بی آئی کی رپورٹ میں ہوا انکشاف، مودی حکومت نے دیا تھا نوٹ بندی نافذ کرنے کا مشورہ

Jan 10, 2017 09:12 PM IST | Updated on: Jan 10, 2017 09:12 PM IST

نئی دہلی۔ نوٹ بندی پر ریزرو بینک کی طرف سے پارلیمنٹ کی ایک کمیٹی کو بھیجے خط میں کہا گیا ہے کہ یہ حکومت ہی تھی جس نے اسے 7 نومبر کو 500 اور 1000 کا نوٹ بند کرنے کی 'صلاح' دی تھی۔ مرکزی بینک کے بورڈ نے اس کے اگلے دن ہی نوٹ بندی کی سفارش کی۔ ریزرو بینک نے پارلیمنٹ کی محکمہ سے متعلق فنانس کمیٹی کو بھیجے سات صفحے کے نوٹ میں کہا ہے کہ حکومت نے ریزرو بینک کو 7 نومبر، 2016 کو مشورہ دیا تھا کہ جعلی نوٹ، دہشت گردی کی مالی اعانت اور کالے دھن، ان تین مسائل سے نمٹنے کے لئے مرکزی بینک کے مرکزی بورڈ آف ڈائریکٹرز کو 500 اور 1000 کی اونچی قیمت والے نوٹوں کو بند کرنے پر غور کرنا چاہئے۔ 'پارلیمانی کمیٹی کے چیئرمین معروف کانگریس لیڈر ایم ویرپا موئلی ہیں۔

ریزرو بینک کے مرکزی بورڈ کے اگلے دن ہی اس مشورہ پر غور کرنے کے لئے میٹنگ ہوئی۔ 'بات چیت' کے بعد مرکزی حکومت سے یہ سفارش کرنے کا فیصلہ کیا گیا کہ 500 اور 1000 کے نوٹوں کو چلن سے باہر کر دیا جائے۔ اس سفارش کے چند گھنٹے بعد ہی وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں ہوئی مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں نوٹ بندی کا فیصلہ کیا گیا۔ کچھ وزیر ابھی تک یہ کہتے رہے ہیں کہ حکومت نے نوٹ بندی کا فیصلہ ریزرو بینک کی سفارش پر کیا تھا۔ کمیٹی کو بھیجے نوٹ میں ریزرو بینک نے کہا کہ گزشتہ چند سال سے وہ نئی سیریز کے بینک نوٹوں میں سدھرے ہوئے سیکورٹی فیچرس شامل کرنے پر کام کر رہا ہے، جس سے ان کی نقل نہ کی جا سکے۔ وہیں دوسری طرف حکومت کالے دھن اور دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے قدم اٹھا رہی ہے۔

آر بی آئی کی رپورٹ میں ہوا انکشاف، مودی حکومت نے دیا تھا نوٹ بندی نافذ کرنے کا مشورہ

گیٹی امیجیز

ریزرو بینک نے کہا کہ انٹیلی جنس اور نافذ کرنے والے اداروں کے پاس اس طرح کی رپورٹ تھی کہ اونچی قیمت کے نوٹوں کی دستیابی کی وجہ سے کالا دھن رکھنے والوں اور جعلی نوٹوں کا دھندہ کرنے والوں کا کام آسان ہو رہا ہے۔ اونچی قیمت کے نوٹوں کا استعمال دہشت گردی کے لئے بھی کیا جا رہا ہے۔ مرکزی بینک نے کہا کہ حکومت ہند اور ریزرو بینک کو لگا کہ نئی سیریز کے نوٹوں کو پیش کرنے سے ان تینوں مسائل سے نمٹنے کا موقع ملے گا۔ نوٹ میں کہا گیا ہے کہ اگرچہ آغاز میں اس پر کوئی پختہ فیصلہ نہیں لیا گیا کہ نوٹ بندی کی جائے یا نہیں، لیکن نئی سیریز کے نوٹ پیش کرنے کی تیاریاں چلتی رہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز