پانچویں اور آٹھویں کلاس میں امتحانات کا جلد ہی بل لائے گی مودی حکومت

حکومت نے آج کہا کہ تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے کے لئے پانچویں اور آٹھویں کلاس میں امتحانات کا ایک بل جلد ہی پارلیمنٹ میں لایا جائے گا۔

Jul 27, 2017 04:38 PM IST | Updated on: Jul 27, 2017 04:38 PM IST

نئی دہلی: حکومت نے آج کہا کہ تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے کے لئے پانچویں اور آٹھویں کلاس میں امتحانات کا ایک بل جلد ہی پارلیمنٹ میں لایا جائے گا۔ انسانی وسائل کی ترقی کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے راجیہ سبھا میں وقفہ سوالات کے دوران ایک ضمنی سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت نے تعلیم کا معیار بہتر بنانے کے لئے وسیع پیمانہ پر مہم شروع کی ہے۔ اب تک ملک میں پہلی سے آٹھویں کلاس میں 'فیل نہ کرنے کی پالیسی' چل رہی ہے۔لیکن 24 ریاستوں نے پانچویں اور آٹھویں کلاس میں امتحان کا مطالبہ کیا ہے جس سے طلبا کی قابلیت کا بروقت جائزہ لیکر ان پر مناسب توجہ دی جا سکے۔ انہوں نے مرکز سے اس سلسلے میں قانون بنانے کی درخواست کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت اس سمت میں قدم بڑھاتے ہوئے ایک بل تیار کر رہی ہے۔ اس میں بچوں کو پانچویں اور آٹھویں کلاس میں ٹیسٹ پاس کرنا ہوگا۔ بہرحال اس التزام کو نافذ کرنا ریاستوں پر منحصر کر یگا۔ یہ امتحانات بورڈ کی سطح پر نہیں بلکہ اسکول کی سطح پر ہی ہوں گے۔ اس بل کو جلد ہی پارلیمنٹ میں پیش کر دیا جائے گا۔

پانچویں اور آٹھویں کلاس میں امتحانات کا جلد ہی بل لائے گی مودی حکومت

file photo

مسٹر جاوڈیکر نے کہا کہ اساتذہ کی تربیت کے نئے ماڈل تیار کئے گئے ہیں۔ تعلیم کو دلچسپ اور تقریح فراہم کرنے والی بنانے کے اقدامات کئے گئے ہیں۔کچھ ریاستوں نے اپنی طرف سے پہل کی ہے اور اس کے بہتر نتائج سامنے آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم کے معیار پر ایک سروے کیا جا رہا ہے جسے ستمبر تک پیش کر دیا جائے گا۔ اس سروے میں ایک کارڈ تیار ہوگاجس میں ہر کلاس کے طلبا کی قابلیت کا ذکر ہوگا۔ اس سے والدین بھی اپنے بچے کی پیش رفت سے واقف ہو سکیں گے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سرکاری سکول کی عمارات کو نجی اداروں کو سونپنے کی کوئی تجویز نہیں ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز