وزیر اعظم نریندر مودی جائیں گے فلسطین: فلسطینی سفیر عدنان الہیجا

Dec 08, 2017 08:56 AM IST | Updated on: Dec 08, 2017 08:56 AM IST

نئی دہلی۔ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ذریعہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے کے بعد پیدا ہوئے تنازعہ کے بیچ وزیر اعظم نریندرمودی فلسطین کے دورے پر جائیں گے ۔ فلسطین کے سفیر عدنان الہیجا نے  یہاں راجیہ سبھا ٹیلی ویژن پر یروشلم کے مسئلہ پر ایک مباحثہ کے دوران بتایا کہ مسٹر مودی فلسطین کے دورے پر جائیں گے ۔انھوں نے حالانکہ یہ نہیں بتایا کہ وزیر اعظم کا یہ دورہ کب ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ ’’میں یہاں اعلان کرتا ہوں اور آپ سے پہلے کوئی نہیں جانتا تھاکہ مسٹر مودی فلسطین کے دورے پر جانے والے ہیں ۔‘‘

مسٹر الہیجا نے کہا کہ ہندستان ہمیشہ فلسطین کے مفاد کی حمایت کرتارہا ہے ۔مسٹر مودی اس سال کے آغازمیں بھی فلسطین کے دورے پر گئے تھے اور اسرائیل کے وزیراعظم بنیامن نیتن یاہواگلے ماہ ہندستان آنے والے ہیں ۔ اس سے قبل کل صبح امریکہ کے ذریعہ یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور تسلیم کئے جانے پر ہندستان نے متوازن ردعمل ظاہرکرتے ہوئے کہا کہ فلسطین کے تعلق سے اسکی آزادانہ پالیسی برقرارہے ۔ وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے یہاں کہا کہ ’’فلسطین کے تعلق سے ہندستان کا موقف آزادانہ اور تسلسل پر مبنی ہے جوہمارے مفادات اور نقطہ نظر کی بنیادپر قائم ہے اور یہ کسی تیسرے ملک کے ذریعہ طے نہیں کیا گیا ہے ۔‘‘

وزیر اعظم نریندر مودی جائیں گے فلسطین: فلسطینی سفیر عدنان الہیجا

امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کے بعد جہاں بین الاقوامی سطح پر اس کی مذمت کا سلسلہ جاری ہے، وہیں دنیا کے متعدد ممالک میں ہزاروں افراد سڑکوں پر بھی اتر آئےہیں اور اس فیصلہ کے خلاف احتجاج کررہے ہیں ۔ فلسطین کے غزہ پٹی ، غرب اردن ، جرمنی اور ترکی میں ہزاروں افراد نے احتجاج کیا ۔

مسٹر ٹرمپ نے امریکی سفارتخانہ کو تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے کی گزشتہ روز منظوری دیدی تھی ۔اس طرح سے امریکہ یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی کے طورپر سرکاری طور پر تسلیم کرنےوالا دنیا کا پہلا ملک بن گیا ہے ۔امریکہ کے اس قدم کی پوری دنیا میں بڑےپیمانہ پر نکتہ چینی ہورہی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز