اترپردیش : وقف بورڈ میں بے ضابطگیوں کی جانچ کر کے قصورواروں کو سز ادی جائے گی : محسن رضا

Apr 19, 2017 06:27 PM IST | Updated on: Apr 19, 2017 06:27 PM IST

لکھنو : اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں واضح اکثریت کے ساتھ اقتدار میں آئی بی جے پی کی حکومت کے ایک ماہ پورے ہو گئے ہیں۔ اس موقع پر ریاست کے اقلیتی امور کے وزیر محسن رضا نے کہا ہے کہ وزیر اعلی یوگی کی حکومت کی پالیسی اور نیت دونوں 30 دن میں ہی صاف ہو گئی ہے اور ہم کام کرنے کے ارادے سے آئے ہیں اور کام کریں گے۔محسن رضا شیعہ وقف بورڈ، سني وقف بورڈ اور حج کمیٹی سے متعلق کہا کہ گزشتہ ایک ماہ کے دوران ہم نے تینوں بورڈ میں کام کاج کے کلچر کو بھانپنے کی کوشش کی ہے۔

اقلیتی وزیر نے کہا کہ میں کہہ سکتا ہوں کہ شیعہ وقف بورڈ، سنی وقف بورڈ اور حج کمیٹی میں بھی گزشتہ حکومتوں کے دوران بھاری بے ضابطگیاں کی گئی ہیں، مگر اب قصورواروں کی شناخت کی جا رہی ہے اور قصورواروں کو بخشا نہیں جائے گا، ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

اترپردیش : وقف بورڈ میں بے ضابطگیوں کی جانچ کر کے قصورواروں کو سز ادی جائے گی : محسن رضا

تینوں بورڈ میں ہوئی بے ضابطگیوں کی سی بی آئی جانچ کرانے کے سوال پر محسن رضا نے کہا کہ تمام طرح کی گڑبڑیوں کی معلومات وزیر اعلی کو دے دی گئی ہے۔ وہ خود ہی ان معاملات کو لے کر کافی سنجیدہ ہیں اور اس سمت میں جلد ہی کوئی کارگر قدم اٹھایا جائے گا۔محسن نے کہا کہ اقلیتی محکمہ کی جانب سے جلد ہی ایک سرکلر جاری کیا جائے گا، جس میں یہ کہا جائے گا کہ جن جن لوگوں کے پاس وقف بورڈ سے متعلق شکایات ہیں، وہ اسے حکومت تک پہنچائیں۔

انہوں نے کہا کہ ان تینوں بورڈو سے تمام لوگ پریشان ہیں، کوئی غازی پور سے آ رہا ہے تو کوئی غازی آباد سے، لیکن اب ہم 100 دن کے اندر اندر پورے محکمہ ڈیجیٹلائز کرنے جا رہے ہیں، اس سے دور سے آنے والوں کو کافی فائدہ ملے گا، لوگ اپنی بات ضلع سطح پر ہی ضلع مجسٹریٹ کے ذریعے رکھ سکتے ہیں۔رضا نے کہا کہ وقف املاک کو لے کر لوگوں کے اعتراضات کے لئے جلد ہی ایک ہیلپ لائن جاری کی جائے گی۔ لوگ اس ہیلپ لائن کے ذریعے اپنے اعتراض درج کروا سکتے ہیں، جس سے محکمہ کے کاموں میں بھی شفافیت آئے گی۔

اقلیتی وزیر نے کہا کہ مدارس میں بھی اب بچوں کو بہتر تعلیم ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم مدرسوں کو مزید بہتر بنانے کی سمت میں کام کر رہے ہیں، ان مدرسوں میں بچوں کو مذہبی تعلیم تو مل ہی رہی ہے، اب ہماری بنیادی توجہ ان مدرسوں میں اسمارٹ تعلیم دینے پر ہے۔انہوں نے کہا کہ مسلم خاندانوں کے بچوں کے لئے 100 دن کے اندر اندر بہت سے انٹرمیڈیٹ اسکول بھی کھولے جائیں گے، جہاں بچوں کو بہتر تعلیم ملے گی اور وہ روزگار کے قابل بن سکیں گے۔محسن رضا نے کہا کہ یوگی حکومت نے مسلم بچیوں کے لئے ایک نئی پہل کی ہے۔ اب حکومت ریاست کے 49 اضلاع میں خیر سگالی پویلین تیار کرے گی، جہاں غریب اقلیتی بچیوں کی اجتماعی شادیاں حکومت اپنے خرچ پر کرائے گی۔

حج کو لے کر انہوں نے کہا کہ حاجیوں کی جانب سے ہمیشہ ہی سفر کے دوران بے ترتیبی کی شکایتیں آتی رہتی ہیں، اس مرتبہ بہتر سے بہتر انتظام کیا جائے گا اور اس میں کوئی کمی نہیں رہ جائے گی۔ یوپی میں حج کوٹہ بڑھانے سے متعلق محسن رضا نے کہا کہ مرکزی حکومت کے وزیر مختار عباس نقوی نے یقین دہانی کرائی ہے کہ اگر حکومت چاہے گی تو ریاست کا حج کوٹہ بھی بڑھایا جائے گا، کیونکہ بڑا صوبہ ہونے کے ناطے یہاں سے حاجیوں کی تعداد بھی زیادہ رہتی ہے۔

حج مسافروں کو آدھار سے جوڑنے کو لے کر انہوں نے کہا کہ جلد ہی حاجیوں کو بھی آدھار سے جوڑا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حج مسافروں کو آدھار سے جوڑنے کا بنیادی مقصد یہی ہے کہ جو لوگ حکومت کی جانب سے مل رہی سبسڈی کا فائدہ ایک مرتبہ لے لیتے ہیں، انہیں دوبارہ یہ فائدہ نہ دیا جائے۔ اقلیتی سماج میں اور بھی بزرگ ہیں، جو حج کے سفر پر جانا چاہتے ہیں ، لیکن وہ جا نہیں پاتے ہیں، ایسا ہونے سے ایک شخص صرف ایک ہی مرتبہ حکومت کی سبسڈی پر سفر حج پر جا سکتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز