منی لانڈرنگ کیس : معروف اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کے خلاف غیر ضمانتی وارنٹ جاری

Apr 13, 2017 07:22 PM IST | Updated on: Apr 13, 2017 07:22 PM IST

نئی دہلی : معروف اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائک کے خلاف منی لانڈرنگ کے معاملے میں غیر ضمانتی وارنٹ جاری کیا گیا ہے۔ ای ڈی کی خصوصی عدالت نے ذاکر نائیک کے خلاف یہ وارنٹ جاری کیا ہے۔ ای ڈی نے عدالت کو دی عرضی میں الزام لگایا ہے کہ چار بار سمن بھیجنے کے بعد بھی ڈاکٹر ذاکر نائیک بیان کے لئے حاضر نہیں ہوئے۔

ای ڈی کی معلومات کے مطابق ذاکر نائیک یو اے ای میں ہیں اور یو اے ای کے ساتھ ہندوستان کا حوالگی معاہدہ ہے، اس لئے غیر ضمانتی وارنٹ کے ذریعے ڈاکٹر ذاکر نائک کو ہندوستان لانے میں مدد ملے گی اور جانچ آگے بڑھ پائے گی۔ ڈاکٹر ذاکر نائک کے خلاف پروینشن آف منی لانڈرنگ کے تحت جانچ کی جا رہی ہے۔

منی لانڈرنگ کیس : معروف اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کے خلاف غیر ضمانتی وارنٹ جاری

ای ڈی کا دعوی ہے کہ عامر اور خود ذاکر نائیک کی بہن نے بھی اپنے بیان میں ڈاکٹر ذاکر نائیک کے ذریعہ آئی آر ایف کو چیریٹی کے تحت ملے پیسوں کا غلط استعمال کرنے کی بات کہی ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ سال دسمبر میں ای ڈی نے نائیک اور دیگر کے خلاف منی لنڈرگ کے سلسلہ میں فوجداری مقدمہ درج کیا تھا۔

غیر قانونی سرگرمی روک تھام قانون کے تحت این آئی اے کی جانب سے نائک کے خلاف درج شکایت کا نوٹس لیتے ہوئے ای ڈی نے منی لانڈرنگ کا کیس درج کیا تھا۔ مرکزی تفتیشی ایجنسی نے کہا تھا کہ نائیک کو بار بار سمن بھیجا گیا ، لیکن وہ اس کے سامنے پیش نہیں ہوئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز