ایران اور ہندوستان کے درمیان باہمی تعاون سے متعلق مفاہمت نامہ آخری مرحلے میں

Jun 18, 2017 12:45 PM IST | Updated on: Jun 18, 2017 12:45 PM IST

نئی دہلی: ہندوستان اور ایران کے درمیان پیشہ ورانہ تربیت، کوآپریٹیو سیکٹر، انشورنس اور اپنے کاروبار کے شعبوں میں باہمی تعاون کے سمجھوتوں کے لئے مفاہمت نامہ کو حتمی شکل دیا جا رہا ہے۔ سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ گزشتہ ہفتے جنیوا میں منعقد ہ بین الاقوامی لیبر کانفرنس کے دوران مرکزی وزیر محنت و روزگار بنڈارو دتاتریہ نے ایران کے کوآپریٹیو، محنت اور سماجی بہبود کے وزیر علی رابعی کے ساتھ دو طرفہ ملاقات کی۔

دونوں لیڈروں نے دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعاون کو مزید آگے بڑھانے کی ضرورت پر اتفاق کیا اور مستقبل میں آپسی تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ ملاقات کے دوران مسٹر رابعي نے کہا کہ مفاہمت نامہ پر دستخط ہونے سے دونوں ممالک کے باہمی تعلقات کو مضبوطی ملے گی اور تعاون کی بنیاد بڑھے گا۔ مسٹر دتاتریہ نے بین الاقوامی لیبر تنظیم میں ہندوستان کا تعاون کرنے کے لئے ایران کا شکریہ ادا کیا۔

ایران اور ہندوستان کے درمیان باہمی تعاون سے متعلق مفاہمت نامہ آخری مرحلے میں

انهوں نے کہا کہ ہندوستان میں میک ان انڈیا، اسکل انڈیا اور مہارت سازی کے لئے متعدد پروگرام چلائے جا رہے ہیں جن کے تجربے سے ایران فائدہ اٹھا سکتا ہے۔ دونوں رہنماؤں نے چھوٹی صنعت، دیہی روزگار اور کاروبار کی تربیت پر و تفصیلی طورپر تبادلہ خیال کیا۔ دونوں لیڈروں نے ایک دوسرے کو اپنے اپنے ملک کے دورے پر بھی مدعو کیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز