معروف تنظیم اردو دوست کی جانب سے اردو پڑھاؤ، اردو بچاو تحریک کا آغاز

Feb 06, 2017 06:54 PM IST | Updated on: Feb 06, 2017 06:54 PM IST

لکھنؤ۔ تعلیمی میدان میں کام کرنے والی اہم تنظیم اردو دوست نے اردو کے فروغ  میں ایک خصوصی تحریک شروع کی ہے، جس کے تحت پرائمری اسکولوں میں اردو تعلیم کو یقینی بنانے کے لیےرابطے کا کام  شروع کیا گیا ہے۔ تاہم ایک بنیادی سوال یہ بھی ہے کہ لوگ اردو کیوں پڑھیں۔ محض اس لئے کہ وہ اس زبان سے جذباتی لگاو رکھتے ہیں، یہ ہمارے ملک کی زبان ہے ۔ بہت شیریں اور پیاری زبان ہے۔ لیکن ان تمام خصوصیات کے باوجود بھی اسے روزگار سے جوڑے بغیر شاید ہدف کا حصول ممکن نہیں۔ادب اور زبان کے جانکاروں کا کہنا ہے کہ اگرابتدائی درجات میں اردو تعلیم کی فراہمی کو یقینی نہیں بنایا گیا تو کالجوں اور یونیورسٹیوں میں اردو کے طلبا وطالبات کی تعداد کا گراف مزید گرجائےگا۔

 یہ شکایتیں عام ہیں کہ مختلف اداروں،  یونیورسٹیوں اور کالجوں میں اردو پڑھنے والے طلباء وطالبات کی تعداد کم ہوتی جا رہی ہے۔ تنظیم سے جڑے لوگوں کا کہنا ہے کہ اردو دوست کی جانب سےشروع کی گئی تحریک کا بنیادی مقصد زبان وادب کا تحفظ اوراس کا استحکام ہے۔ اردو تعلیم کی فراہمی کو یقینی بنانا اور پھراسے روزگار سے جوڑنا یہ ایسے اقدامات ہیں جن کے ذریعہ مسائل کا حل ممکن ہوسکتا ہے۔ جو لوگ تشویش کے ساتھ تنقید وتبصرے کررہے ہیں ان کو چاہئے کہ وہ حالات واسباب پر بھی غورکریں ۔

معروف تنظیم اردو دوست کی جانب سے اردو پڑھاؤ، اردو بچاو تحریک کا آغاز

اردو دوست کی تحریک میں ڈاکٹرعباس رضا نیراور شعبہء اردو کے کئی اور لوگ بھی شریک ہوکرمنظر نامے کو بہتری کے لیے بدلنے کی کوششیں کررہے ہیں۔ اس خاص تحریک کے ذریعے لوگوں کی ذہن سازی بھی کی جائے گی اور اسکولوں کےابتدائی درجات میں اردوتعلیم کی فراہمی کے لیےسنجیدہ کوششیں بھی کی جائیں گی ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز