معاشرے کے آخری پائیدان پر کھڑے شخص تک ترقی کی روشنی پہنچانا ہمارا مقصد : مختار عباس نقوی

Sep 04, 2017 03:11 PM IST | Updated on: Sep 04, 2017 03:11 PM IST

نئی دہلی: بدعنوانی سے پاک اور ترقی سے بھرپور حکومت کے عہد کا اعادہ کرتے ہوئے مرکزی کابینہ کے اقلیتی امور کے وزیر مختار عباس نقوی نے کہا کہ سب کا ساتھ سب کا وکاس ، تھری ای اور ترقی کی روشنی سوسائٹی کے آخری پائیدان پر کھڑے شخص تک پہنچے کے عہد پر کاربند رہتے ہوئے میں آگے بڑھ رہے ہیں۔ یہ بات انہوں نے وزیر مملکت سے کابینہ کے وزیر بنائے جانے کے بعد وزارت کی ذمہ داری سنبھالتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہاکہ ہماری وزارت نے اقلیتوں سے متعلق تمام اسکیموں کو زمین پر اتارنے کا کام کیا ہے اور یہی وجہ ہے کہ ملک میں ترقی اور اعتماد کا ماحول پیدا ہوا ہے اور اسے مزید رفتار دیں گے۔انہوں نے کہاکہ ہماری وزات نے تھری ای یعنی ایجوکیشن ، ایمپلائمنٹ،امپاورمنٹ کو اہم مقصد بنایا ہے اور اس پر ہم تیزی سے کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے وزیر اعظم کا نظریہ ہے کہ معاشرے میں آخری پائیدان پر کھڑے لوگوں تک ترقی کی روشنی پہنچے اورہم اس عہد کے پابند ہیں۔

معاشرے کے آخری پائیدان پر کھڑے شخص تک ترقی کی روشنی پہنچانا ہمارا مقصد : مختار عباس نقوی

مسٹر نقوی نے کہا کہ موجودہ حکومت کی حکمرانی میں ترقی کے ماحول کو مضبوطی ملی ہے اور گزشتہ تین سال میں حکومت کی اسکیموں کے نفاذ میں واضح طور پر تبدیلی نظر آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے خلاف پروپیگنڈے کی مہم بھی چھیڑی گئی لیکن عوام کے بھروسے کی وجہ ایسی طاقتوں کو کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ حکومت کی توجہ صرف اورصرف ترقی پرہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی کے معاملے پر کسی اور چیز پر غالب ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔انہوں نے کہاکہ ہماری وزارت نے منہ بھرائی کے بغیر اقلیتوں کو بااختیار بنانے کا کام کیا ہے۔

نئی حج پالیسی کے بارے میں سوال پر، انہوں نے کہا کہ یہ تقریبا تیار ہے اور اس کا جائزہ لینے کے بعد اسے لاگو کیا جائے گا۔ سمندر کے راستے سے حج کے بارے میں مسٹر نقوی نے کہا کہ اس بارے میں جہاز رانی کے وزیر نتن گڈکری کے ساتھ 28 ستمبر کو میٹنگ ہوئی تھی۔ حج کے تمام پہلوؤں کا مطالعہ کیا جا رہا ہے اور یہ معاملہ سعودی حکومت کے ساتھ مذاکرات کرنے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا۔ نئے اقلیتی امور کے وزیر مملکت ویریندر کمار نے ذمہ داری سنبھالتے ہوئے کہا کہ وزارت کی کوشش رہے گی کہ تربیت کو مہارت سے جوڑ کر ہنرمندوں کے لئے مارکیٹ مہیاکرایا جائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز